Tuesday - 2018 Sep 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183495
Published : 20/9/2016 6:17

شام کے فوجی ٹھکانوں پر امریکا کا حملہ شرمناک جارحیت ہے:بشار اسد

شام کے صدر بشار اسد نے شامی فوج کے ٹھکانے پر امریکا اور اس کے اتحادیوں کے ھوائی حملے کو شرمناک جارحیت قرار دیا۔


شام کے صدر بشاراسد نے پیر کو دمشق میں ایران کے نائب وزیرخارجہ حسین جابری انصاری سے ملاقات میں کہا کہ مغرب کی بڑی طاقتیں شام میں سرگرم دھشت گردوں کی حمایت کررہی ہیں،شام کے صدر نے کہا کہ ان حمایتوں کی تازہ ترین مثال دیرالزور میں شامی فوج کے ٹھکانے پر امریکا اور اس کے اتحادیوں کا شرمناک حملہ ہے،انہوں نے کہا کہ اس حملے سے داعش کو  فائدہ پہنچایا گیا ہے،بشاراسد نے کہا کہ شامی حکومت کے مخالف دھڑے اپنی ساری توانائی اس بات پر صرف کررہے ہیں کہ شام میں دھشت گردانہ جنگ جاری رہے،ان کا کہنا تھا کہ جب بھی شام جنگ کے میدانوں یا قومی مصالحت کے میدان میں کامیابی حاصل کرتا ہے دمشق حکومت کے مخالف ممالک دھشت گردوں کے لئے اپنی حمایت میں اضافہ کردیتے ہیں،شام کے صدر بشار اسد نے یہ بیان ایک ایسے وقت دیا ہے جب برطانوی وزارت جنگ نے پیر کو اپنے بیان میں کہا ہے کہ دیرالزور میں شامی فوج کے ٹھکانے پر حملے میں اس کے جنگی طیاروں نے بھی حصہ لیا تھا-
 دمشق میں ہونے والی اس ملاقات میں ایران کے نائب وزیرخارجہ حسین جابری انصاری  نے بھی دیرالزور میں شامی فوج کے ٹھکانے پر امریکا اور اس کے اتحادیوں کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے ایک آزاد و خود مختار ملک کے خلاف کھلی جارحیت قراردیا-
سحر ٹی وی



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 25