Thursday - 2018 Nov 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183570
Published : 27/9/2016 18:6

حج کے متعلق رہبر انقلاب کا نظریہ:

حج کی روح،مشرکین سے بیزاری ہے

حج میں جگہ جگہ اہل قبلہ کے اتحاد و یکجہتی اور غیر حقیقی امتیازات کی بے اعتباری اور حقیقی و ایمانی اخوت و اتحاد کی جلوہ افروزی کے مظاہر دکھائی دیتے ہیں،حج انہیں دروس و اسباق کے سیکھنے اور دہرانے کا نام ہے۔


ولایت پارٹل:اظہار برائت کو ہم نے باہر سے لاکر حج پر مسلط نہیں کیا ہے،یہ حج کا جزء، حج کی روح اور حج کے عظیم اجتماع کا حقیقی مفہوم ہے،بعض افراد کو یہ بہت اچھا لگتا ہے کہ دنیا کے گوشہ و کنار میں اخبارات اور اپنے بیانوں اور تنقیدوں میں مسلسل یہی رٹ لگائيں کہ«آپ نے تو حج کو سیاسی رنگ دے دیا ہے، حج کو بھی سیاسی چیز بنا دیا ہے»آخر وہ کہنا کیا چاہتے ہیں؟! اگر ان کا مقصد یہ ہے کہ ہم نے کسی سیاسی مفہوم کو شامل کر دیا ہے تو ان کے جواب میں یہی کہنا چاہئے کہ حج کبھی بھی سیاسی مفہوم سے خالی نہیں رہا۔
مشرکین سے برائت کا اعلان اور بتوں اور بتگروں سے بیزاری کا اظہار، مؤمنین کے حج پر حکمفرما روح ہے،حج میں قدم قدم پر دل و جان اللہ کے سپرد کر دینے، اس کی راہ میں سعی و کوشش، مشرکین سے برائت، اس شیطان پر کنکریاں مارنے اور اسے دھتکارنے، نیز اس کے مقابلے میں محاذ قائم کرنے کے مناظر نظر آتے ہیں،اسی طرح حج میں جگہ جگہ اہل قبلہ کے اتحاد و یکجہتی اور غیر حقیقی امتیازات کی بے اعتباری اور حقیقی و ایمانی اخوت و اتحاد کی جلوہ افروزی کے مظاہر دکھائی دیتے ہیں،حج انہیں دروس و اسباق کے سیکھنے اور دہرانے  کا نام ہے۔
khamenei.ir


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 22