Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183572
Published : 27/9/2016 18:26

حج بیت اللہ کے متعلق رہبر انقلاب کا نظریہ:

مشرکین سے اعلان برائت حج کا ایک بنیادی ستون ہے

در حقیقت حج غفلت و بے حسی کو دور کرنے کی اسلام کی اہم ترین تدبیر ہے،اس فریضے کا بین الاقوامی پہلو اس پیغام کا حامل ہے کہ امت مسلمہ پر اجتماعی حیثیت سے بھی غفلت و بے خبری کی گرد جھاڑنے کا فریضہ ہے۔


ولایت پارٹل:
اس عظیم موقع پر جہاں ذکر خدا «فاذکروا اللہ کذکرکم آبائکم او اشد ذکرا»اور مشکرین سے اعلان برائت«و اذان من اللہ و رسولہ الی الناّس یوم الحج الاکبر انّ اللہ بریء من المشرکین و رسولہ»،حج کے بنیادی ارکان میں شمار ہوتے ہیں وہیں دوسری طرف ہر اس عمل کے سلسلے میں احتیاط بھی بہت زیادہ ہے جس سے (دینی) بھائیوں یعنی اس امت واحدہ کے اعضاء کے درمیان جدائی و دشمنی میں اضافہ ہو،حتی دو مسلمان بھائيوں کے ما بین وہ بحث و تکرار بھی جو معمول کی زندگی میں کوئی خاص بات نہیں سمجھی جاتی،حج میں ممنوع و حرام ہے«فلا رفث و لا فسوق و لا جدال فی الحج»۔
جس میدان میں مشرکین، یعنی یکتا پرست امت واحدہ کے اصلی دشمنوں سے اظہار برائت لازمی ہو جاتا ہے وہیں مسلمان بھائیوں یعنی یکتا پرست امت واحدہ کے اعضاء کے درمیان بحث و تکرار ممنوع و حرام ہو جاتی ہے،اس طرح حج میں اتحاد و اجتماعیت کا پیغام اور بھی آشکارا ہو جاتا ہے۔
در حقیقت حج غفلت و بے حسی کو دور کرنے کی اسلام کی اہم ترین تدبیر ہے،اس فریضے کا بین الاقوامی پہلو اس پیغام کا حامل ہے کہ امت مسلمہ پر اجتماعی حیثیت سے بھی غفلت و بے خبری کی گرد جھاڑنے کا فریضہ ہے۔
khamenei.ir


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17