Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 183575
Published : 27/9/2016 18:57

حج کے متعلق رہبر انقلاب کا نظریہ:

حج اتحاد کا مرکز ہے،مسلمان اسے اختلاف کا گڑھ نہ بنائیں

امور حج کے ذمہ دار،کاروانوں کے ذمہ دار اور علماء حضرات، سب ہوشیار رہیں کہ اتحاد کے اس موقع کو (بعض عناصر) تفرقہ انگیزی کا حربہ نہ بنا لیں۔


ولایت پارٹل:
یہ کتنی بڑی ستم ظریفی ہے کہ کوئی شخص اتحاد کے اس ذریعے اور وسیلے کو اختلاف و خلیج پیدا کرنے کا حربہ بنا لے،یہ خطاب ہر ایک سے ہے،(میرا) خطاب صرف اس متعصب اور کفر کے فتوے صادر کرنے والے شخص سے نہیں ہے جو مدینے میں کھڑے ہوکر شیعوں کے مقدسات کی بے حرمتی کرتا ہے ــ میرا خطاب سبھی سے ہے ــ۔ امور حج کے ذمہ دار،کاروانوں کے ذمہ دار اور علماء حضرات، سب ہوشیار رہیں کہ اتحاد کے اس موقع کو (بعض عناصر) تفرقہ انگیزی کا حربہ نہ بنا لیں، دلوں میں ایک دوسرے کی کدورتیں نہ بھر دیں،کون سی چیز ہے جو ایک شیعہ کے دل میں اپنے غیر شیعہ مسلمان بھائی کے تعلق سے کینہ بھر دیتی ہے، ایک سنی کے دل کو اپنے شیعہ مسلمان بھائی کی کدورت سے پر کر دیتی ہے،غور کیجئے! کہ وہ کون سی چیزیں ہیں؟ان کی نشاندہی اور انہیں دور کرنے کی ضرورت ہے،حج کو جو زخم کا مداوا، اتحاد کا ذریعہ اور عالم اسلام کے دلوں، نیتوں اور ارادوں کی یکسانیت و ہم آہنگی کا وسیلہ ہے،انتشار اور بغض و عناد کا حربہ نہیں بننے دینا چاہئے،اس مسئلے اور اس کے مصادیق کی شناخت کے لئے بہت ہوشیاری اور دقت نظر کی ضرورت ہے۔
khamenei.ir


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17