Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 184195
Published : 16/11/2016 17:2

انسانیت کی دہائی دے رہے ہیں نائجیریا کے بچے

افریقی ملک نائیجیریا میں خوراک کا بحران شدت اختیار کرتا جا رہا ہے،اقوام متحدہ کا کہنا ہے اس وقت 14لاکھ افراد خوراک اور ادویات کی قلت کا شکار ہیں۔



ولایت پورٹل:اقوام متحدہ کے مطابق اگر بروقت امداد نہ پہنچائی گئی تو آنے والے چند مہینوں میں 75ہزار بچوں سمیت ایک لاکھ سے زائد افراد موت کے منہ میں چلے جائیں گے۔اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے نمائندے پیٹر لینڈن برگ نے اقوام متحدہ میں ایک رپورٹ جمع کرائی ہے جس کے مطابق نائیجیریا میں14 لاکھ افراد کو امداد کی ضرورت ہے،لینڈن برگ نے کہا کہ اقوام متحدہ کے پاس اس حوالے سے فنڈز ناکافی ہیں، عالمی برادری کو جلد از جلد اس انسانی بحران سے نمٹنے کے لئے آگے آنا ہو گا۔تیزی اور سنجیدگی سے کچھ نہیں کیا تو آنے والے چند مہینوں کے دوران چار لاکھ بچوں میں سے 75ہزار بچوں کے بھوک سے مرنے کا خطرہ ہے،شدت پسند تنظیم بوکو حرام کی جانب سے سنہ 2009میں شروع کیے جانے والے فوجی آپریشن میں دسیوں ہزاروں افراد ہلاک جب کہ 20لاکھ سے زائد بے گھر ہو چکے ہیں۔اقوامِ متحدہ نے جولائی میں متنبہ کیا تھا کہ ریاست بورنو میں دس لاکھ بچوں میں سے تقربیاً ایک چوتھائی بچے غذائی قلت کا شکار تھے۔
ابلاغ



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24