Friday - 2018 Dec 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185755
Published : 18/2/2017 16:53

انعام یا رشوت!!!

انسان کو نیک کاموں کا عادى ہونا چاہیئے، اور وہ ان کو خدا کى رضا اور بندگان خدا کى خدمت کے لیے انجام دے،نہ یہ کہ ہر کام پر اس کى آنکھیں لوگوں سے انعام کى منتظر رہیں، اس طرح کا بچہ جب بڑا ہوتا ہے تو وہ کوتاہ فکر ہوجاتا ہے، اور لوگوں کے کاموں کى انجام وہى اپنى ذمہ دارى نہیں سمجھتا، حتى المقدور دوسروں کے کام آنے سے فرار کرتا ہے۔


ولایت پورٹل:
تعلیم و تربیت کا ایک اور وسیلہ انعام دینا ہے، انعام دینا برى بات نہیں ہے بشرطیکہ غیر متوقع ہو کسى پہلے وعدہ کى وفا کے طور پر نہ دیا جائے ۔ اور اچھا کام کرنے پردیا جائے۔ پہلے سے اگر انعام کا وعدہ کردیا جائے تو یہ بچے میں برے اثرات مترتب کرے گا کیونکہ ممکن ہے ایسا کرنے سے بچہ اس بات کا عادى ہوجائے کہ وہ ہر نیک کام کے مقابلے میں انعام کا منتظر رہے۔
اور یہ ایک طرح کى رشوت ہوجائے، وہ  انعام اور رشوت کے بغیر کسی کام کى انجام وہى پر آمادہ ہی نہ ہو۔
انسان کو نیک کاموں کا عادى ہونا چاہیئے، اور وہ ان کو خدا کى رضا اور بندگان خدا کى خدمت کے لیے انجام دے،نہ یہ کہ  ہر کام پر اس کى آنکھیں لوگوں سے انعام کى منتظر رہیں، اس طرح کا بچہ جب بڑا ہوتا ہے تو وہ کوتاہ فکر ہوجاتا ہے، اور لوگوں کے کاموں کى انجام وہى اپنى ذمہ دارى نہیں سمجھتا، حتى المقدور دوسروں کے کام آنے سے فرار کرتا ہے،مگر یہ کہ اسے کسى انعام یا رشوت کا لالچ دیا جائے،یہ ایک بہت بڑى اجتماعى برائی ہے، لہذا اس لیے کہ انعام اس برائی کا باعث نہ بنے ضرورى ہے کہ انعام اتنى مقدار کا ہونا چاہیئے کہ وہ انعام یافتہ شخص کى عادت ثانوى نہ بن جائے، جب بچہ کاموں کا عادى ہوجائے تو آہستہ آہستہ انعام و اکرام کا سلسلہ ختم کردیں،اور اسے کاموں کى انجام دہى کر ترغیب دلائی جائے، ضرورى ہے کہ بچہ آہستہ آہستہ اپنى ذمہ دارى پر عمل پیرا ہونے کا عادى ہوجائے تا کہ وہ اس کى انجام دہى سے لذت و خوشى محسوس کرے،بہت سے ماں باپ اپنے بچوں کو امتحان میں سو فیصد نمبر لینے پر انعام دیتے ہیں اور اس ذریعے سے وہ انہیں سبق پڑھنے کى ترغیب دلاتے ہیں،ممکن ہے یہ کسى حد تک مؤثر بھى ہو، لیکن اس میں ایک بہت بڑا نقصان بھى ہے وہ یہ کہ یہ پروگرام بچے کے احساس ذمہ دارى پر کارى ضرب لگاتا ہے، یہ بچے اس لیے پڑھتے ہیں تا کہ اچھے نمبر حاصل کرکے انعام لے سکیں ،حالانکہ یہ ضرورى ہے کہ بچے اپنى ذمہ دارى کو سمجھ کر پروان چڑھیں ،نہ یہ کہ ہر کام کے مقابلے میں کسى مادى انعام کے خواہش مند رہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Dec 14