Saturday - 2018 Dec 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185852
Published : 22/2/2017 14:21

تہران میں جاری انتفاضہ کانفرنس ہمارے لئے مشکلات ایجاد کرسکتی ہے:اسرائیلی ذرائع ابلاغ

صیہونی ذرائع ابلاغ نے، جو تہران میں انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں منعقدہ کانفرنس پر توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں، اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ تہران کانفرنس اس سے قبل کی کانفرنسوں کے مقابلے میں زیادہ وسیع پیمانے پر منعقد ہوئی ہے۔


ولایت پورٹل:
صیہونی ذرائع ابلاغ کے حوالے سے المیادین ٹی وی نے رپورٹ دی ہے کہ انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں تہران کانفرنس جو منگل کو شروع ہوئی ہے، بے مثال رہی ہے جس میں اسلامی مزاحمتی تحریک حماس اور جہاد اسلامی فلسطین کے حکام اور خصوصی وفود سمیت اعلی سطح کے اسّی وفود نے شرکت کی ہے۔
صیہونی ذرائع ابلاغ نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ اس کانفرنس میں رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے اسرائیل کے وجود کے خاتمے کی ضرورت پر تاکید کی ہے، رپورٹ دی ہے کہ اس میں شک نہیں کہ فلسطین کے بارے میں اس سے قبل کی کانفرنسوں کے مقابلے میں انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں منعقدہ چھٹی کانفرنس کے زیادہ وسیع اثرات مرتب ہوں گے۔
صیہونی ذرائع ابلاغ نے اعلان کیا ہے کہ رہبر انقلاب اسلامی نے اپنے خطاب میں فرمایا ہے کہ تیسری انتفاضہ، صیہونی حکومت کے لئے ایک اور شکست پر منتج ہو گی اور عنقریب تاریخ سے صیہونی حکومت کا ناپاک وجود ختم ہو جائے گا۔
ان ذرائع ابلاغ نے کہا ہے کہ رہبر انقلاب اسلامی نے فلسطینیوں میں اتحاد کی ضرورت پر تاکید فرمائی ہے اور فلسطینیوں کی مزاحمتی تحریکوں کی حمایت کو واجب قرار دیا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ دنیا کے اسّی ملکوں کے حکام اور اہم شخصیات کی شرکت سے تہران میں انتفاضہ فلسطین کی حمایت میں چھٹی دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس منگل کے روز رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای کے عظیم خطاب سے شروع ہوئی تھی۔
سحر


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Dec 15