Thursday - 2018 july 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 185943
Published : 27/2/2017 13:51

بحرینی رہنما کے خلاف کسی بھی حماقت کا ارتکاب آل خلیفہ کو مہنگا پڑےگا

بحرینی شیعوں کے رہبرآیت اللہ شیخ عیسی قاسم کے نمائندے شیخ عبداللہ الدقاق نے کہا کہ بحرینی شیعوں کے رہنما حضرت آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کے گھر پر حملہ بحرینی حکومت کی بہت بڑی حماقت ہوگی اور آل خلیفہ حکومت کو یہ حملہ مہنگا پڑےگا۔

ولایت پورٹل:
بحرینی شیعوں کے رہبر کے نمائندے شیخ عبداللہ الدقاق نے ایک نامہ نگار کے ساتھ گفتگو میں کہا ہے کہ بحرینی شیعوں کے رہنما حضرت آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کے گھر پر حملہ بحرینی حکومت کی بہت بڑی حماقت ہوگی اور آل خلیفہ حکومت کو یہ حملہ مہنگا پڑےگا۔
شیخ دقاق نے کہا کہ بحرین میں عوامی انقلاب کی لہر گذشتہ 6 سال سے جاری ہے اور آل خلیفہ حکومت کے بہیمانہ اور مجرمانہ اقدامات سے عوامی تحریک میں مزيد جوش و ولولہ پیدا ہوا ہے اور بحرینی حکومت کی معاندانہ سازشوں کے خلاف بحرینی عوام سیسہ پلائی ہوئی دیوار کے مانند کھڑے ہیں۔
انھوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک و شبہ نہیں کہ بحرین کی آل خلیفہ حکومت کی پشت پر امریکہ اور سعودی عرب کا ہاتھ ہے اور آل خلیفہ حکومت در حقیقت  امریکہ اور سعودی عرب کی بیساکھیوں پر کھڑی ہے۔
شیخ دقاق نے کہا کہ بحرین کے مختلف علاقوں میں عوامی مظاہرے شدت کے ساتھ جاری ہیں اور اگر بحرینی حکومت نے بحرینی عوام کے رہنما کے خلاف کسی بھی حماقت کا ارتکاب کیا تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے،بحرینی عوام آخری سانس تک اپنے دینی اور مذہبی رہنما کے ساتھ ہیں اور آیت اللہ شیخ عیسی قاسم بحرینی عوام کی ریڈ لائن ہے اگر آل خلیفہ حکومت نے اس ریڈ لائن کو عبور کرنے کی کوشش کی تو اس کے سنگین نتائج کی ذمہ داری اس پر عائد ہوگی،شیخ دقاق نے کہا کہ شیخ عیسی قاسم کی شہریت سلب کرنا آل خلیفہ حکومت کا غیر قانونی اقدام ہے،شیخ عیسی قاسم بحرینی شہری تھے ، بحرینی شہری ہیں اور بحرینی شہری رہیں گے۔
مہر


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 july 19