Thursday - 2018 Nov 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 186192
Published : 14/3/2017 13:8

امریکہ کا اصلی چہرہ بے نقاب،دہشتگردی پر بنی فلم کو دیا آسکر ایوارڈ

امریکہ کی جانب سے دہشت گردوں کی پشت پناہی اب کوئی ایسا راز نہیں رہا جو دنیا کی نگاہوں سے مخفی ہو کیونکہ امریکہ کا داغدار چہرہ گاہ بگاہ دنیا کے سامنے عیاں ہوتا رہتاہے،کبھی یہ چہرہ شام میں دہشت گردوں کی پشت پناہی اور کبھی عراق میں البغدادی کو بحفاظت فرار کی صورت میں عیاں ہواہے۔

ولایت پورٹل:امریکہ کی جانب سے دہشت گردوں کی پشت پناہی اب کوئی ایسا راز نہیں رہا جو دنیا کی نگاہوں سے مخفی ہو کیونکہ امریکہ کا داغدار چہرہ گاہ بگاہ دنیا کے سامنے عیاں ہوتا رہتاہے،کبھی یہ چہرہ شام میں دہشت گردوں کی پشت پناہی اور کبھی عراق میں البغدادی کو بحفاظت فرار کی صورت میں عیاں ہواہے۔
حال ہی میں فلم «The White Helmets»کو آسکر ایوارڈ ملنا اس بات کا ناقابل تردید ثبوت ہے کہ امریکہ تمام دہشت گرد تنظیموں کا سرغنہ ہے۔
دی وائٹ ہیلمٹس کی کہانی بہت سادہ سی ہے، جس میں شام کے جبہۃ النصرہ کے برے چہرے کو اچھا دیکھانے کی کوشش کر کے اس کو انسانی ہمدردی کا چہرہ دیا گیا یے۔
واضح رہے کہ وائٹ ہیٹس فلم کو دہشت گرد گروہ کے قبضہ کیے ہوئے علاقے میں بنایا گیا ہے، یہ 40 منٹ کی فلم ہے، جس کے ڈائریکٹر انگلینڈ کے «اورلینڈو وان اینشیڈل» ہیں۔
اس فلم اور ان تصویروں کے جعلی ہونے کی دستاویزات شائع ہو چکی ہیں،ان تصویروں سے ثابت ہوتا ہے کہ یہ جبہۃ النصرہ اور القاعدہ کے افراد ہیں، اور تعجب کی بات ہے کہ میڈیا اور سوشل نیٹ ورک پر اتنے زیادہ ثبوت ہونے کے باوجود اس گروہ کی پیش کی ہوئی فلم کو آسکر ایوارڈ دیا جاتا ہے۔
White Helmets کو ایوارڈ سے یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ امریکہ شام میں ہر طرح سے دہشت گردوں کی پشت پناہی کر رہا ہے۔
شفقنا


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 15