Tuesday - 2018 Nov 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 186210
Published : 14/3/2017 18:7

حضرت زہرا(س) کی نظر میں امامت کا فلسفہ

حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا فرماتی ہیں:ہم اہلبیت رسول(ص)، خدا سے ارتباط کا وسیلہ ہیں، ہم خدا کے برگزیدہ ہیں، ہم پاکیزگیوں کا مرکز اور اس کے قدس کا مقام ہیں ہم خدا کی حجت اور اس کی روشن دلیل ہیں اور ہم اس کے انبیاء کے وارث ہیں۔


ولایت پورٹل:معصوم ائمہ کے بارے میں فاطمہ زہرا(س) س فرماتی ہیں:
قالت:«وَنَحْنُ وَسِیْلَتُه فِی خَلْقِهٖ وَنَحْنُ خَاصَّتُه وَمَحَلُّ قُدْسِهٖ وَنَحْنُ حُجَّتُه فِی غَیْبِهٖ ٖ وَنَحْنُ وَرَثَةُ اَنْبِیَائِهٖ»۔(۱)
ترجمہ:ہم اہلبیت رسول(ص)، خدا سے ارتباط کا وسیلہ ہیں، ہم خدا کے برگزیدہ ہیں، ہم پاکیزگیوں کا مرکز اور اس کے قدس کا مقام ہیں ہم خدا کی حجت اور اس کی روشن دلیل ہیں اور ہم اس کے انبیاء کے وارث ہیں۔
فلسفۂ امامت
فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا نے ایک اشارہ میں امامت کا فلسفہ بیان کر دیا۔
قالت:«فَجَعَلَ اللہُ اِطَاعَتنَا نِظَاماً لِلْمِلَّةِ وَاِمَامَتنَا اَمَاناً لِلْفُرْقَة»۔(۲)
ترجمہ:خدا نے ہم ائمہ اہلبیت کی اطاعت کو ملت کے اجتماعی نظام کو برقرار رکھنے کا ذریعہ قرار دیا ہے اور ہماری امامت کو تفرقہ پردازی سے امان کا سبب قرار دیا ہے۔
تربیت میں امام کا کردار
انسانی معاشرہ میں کامل تربیت کے لئے نمونوں کی ضرورت کے پیش نظر فاطمہ زہرا(س) نے رسول خدا (ص) اور حضرت علی علیہ السلام  کے تربیتی کردار کوبیان کیا ہے۔
قَالَتْ:«اَبُوَا هٰذَہٖ الُامَّةِ مُحَمَّدٌ وَعَلِیٌّ عَلَیْهِمَا السَّلاَمُ یُقِیمَانِ اَوَدَهُمْ وَیُنْقِذَانِهِمْ مِنَ الْعَذَابِ الدَّائِمِ اِنْ اَطَاعُوْهُمَا وَ یُبِیْحَانِهِمِ النِّعِیْمَ الدَّئِمَ اِنْ وَافَقُوْهُمَا»۔(۳)
ترجمہ:محمد(ص) و علی(ع) اس امت کے دو باپ ہیں و ہ امت کے پیچ و خم کو سیدھا اور اس کی کجرویوں کی اصلاح کرتے ہیں اگر لوگ ان کی اطاعت کریں تویہ دونوں حضرات لوگوں کو دائمی عذاب سے بچا لیں گے اور اگر لوگ ان کے نقش قدم پر چلیں اور ان کی موافقت کریں تو یہ دونوں ان کو ہمیشہ رہنے والی نعمتوں سے مالامال کردیں گے۔
...................................................................................................................................................................................................
حوالہ جات:
۱۔شرح ابن ابی الحدید المعتزلی،ج ۱۶ ،ص ۲۱۰ ۔
۲۔یہ حضرت فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کے اس خطبہ کا جزء ہے جو آپ نے مسجد مدینہ میں دیا تھا،ملاحظہ کریں: حدیث ۵۷ ۔
۳۔تفسیر امام حسن عسکری علیہ السلام ،ص ۳۳۰،بحار الانوار ،ج۲۳،ص۲۵۹ ۔


 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Nov 20