Friday - 2018 Nov 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 186254
Published : 18/3/2017 11:20

سعودی عرب کی بڑھتی جارحیت پر :

اقوام متحدہ کی خاموشی کے خلاف صنعا میں یمنی خواتین کا شدید احتجاج

ہزاروں یمنی خواتین نے دارالحکومت صنعا میں اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے سہ روزہ دھرنے کا آغاز کر دیا ہے،دھرنے میں شریک یمنی خواتین، اپنے ملک کے خلاف سعودی جارحیت بند کرانے اور غذائی اشیاء اور دواؤں کی ترسیل کو یقینی بنائے جانے کا مطالبہ کر رہی ہیں،توقع ہے کہ اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے یمنی خواتین کا یہ دھرنا، تین روز تک جاری رہے گا۔

ولایت پورٹل:ہزاروں یمنی خواتین نے دارالحکومت صنعا میں اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے سہ روزہ دھرنے کا آغاز کر دیا ہے،دھرنے میں شریک یمنی خواتین، اپنے ملک کے خلاف سعودی جارحیت بند کرانے اور غذائی اشیاء اور دواؤں کی ترسیل کو یقینی بنائے جانے کا مطالبہ کر رہی ہیں،توقع ہے کہ اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے یمنی خواتین کا یہ دھرنا، تین روز تک جاری رہے گا۔
اقوام متحدہ کے بچوں کے ادارے یونیسیف نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں بتایا ہے کہ سعودی جارحیت کے نتیجے میں ایک ہزار، پانچ سو، چھیالیس بچے شہید اور دو ہزار چار سو پچاس معذور ہوئے ہیں،سعودی عرب نے چھبیس مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن کو جارحیت کا نشانہ بنا رکھا ہے،عالمی اداروں کی رپورٹوں کے مطابق سعودی جارحیت میں گیارہ ہزار سے زائد یمنی شہری شہید اور ہزاروں زخمی ہوئے ہیں جبکہ لاکھوں یمنی شہریوں کو اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔
ابلاغ


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Nov 16