Wed - 2018 Nov 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187128
Published : 6/5/2017 17:39

مؤمنین کو نقصان پہنچانےکی سزا

شیعوں کےچھٹے پیشوا حضرت امام جعفرصادق علیہ السلام ایک اور مقام پرفرماتے ہیں:جو شخص بھی ایک مؤمن کو ایک بادشاہ اور سلطان سے ڈرائے کہ اسے اس سے آزار و اذیت پہنچے گی،اب اگرچہ وہ آزار و اذیت نہ دیکھے تو وہ جہنم میں جائے گا اوراگراسے آزار و اذیت پہنچی تو وہ فرعون اوراس کی نسل کے ساھ جہنم میں ہوگا۔

ولایت پورٹل:پیغمبر اکرم حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اپنی ایک نورانی حدیث میں ارشاد فرمایا:مؤمن کی اہانت اور اس کو برا بھلا کہنا، فسق ہے، اس کے ساتھ جنگ کرنا کفر اور اس کی غیبت کرنا گناہ اوراس کے مال کی حرمت، اس کے خون کی حرمت کی طرح ہے۔(۱)
امام جعفرصادق علیہ السلام فرماتے ہیں:جوشخص بھی ایک لفظ کی حد تک کسی مؤمن کے نقصان کے لیے کام کرے گا تو وہ ایسی حالت میں اپنے رب سے ملاقات کرے گا کہ اس کی پیشانی پرلکھا ہوگا کہ:( یہ شخص اللہ کی رحمت سے ناامید اور مایوس ہے)۔(۲)
شیعوں کےچھٹے پیشوا حضرت امام جعفرصادق علیہ السلام ایک اور مقام پرفرماتے ہیں:جو شخص بھی ایک مؤمن کو ایک بادشاہ اور سلطان سے ڈرائے کہ اسے اس سے آزار و اذیت پہنچے گی،اب اگرچہ وہ آزار و اذیت نہ دیکھے تو وہ جہنم میں جائے گا اوراگراسے آزار و اذیت پہنچی تو وہ فرعون اوراس کی نسل کے ساھ جہنم میں ہوگا۔(۳)۔اسی طرح آپ علیہ السلام نے فرمایا:جب بھی ایک شخص اپنےمؤمن بھائی کو اف کہے تو وہ اس کی ولایت اور دوستی کی حریم سے نکل چکا ہے۔(۴)
.........................................................................................................................................................................................
حوالہ جات:
۱۔السنن الکبری.ج8.ص333
۲۔وسایل الشیعه، ج17، ص298
۳۔الکافی،ج2، ص368
۴۔الکافی، ج2، ص361

شبستان


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 14