Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187154
Published : 8/5/2017 16:20

5000چینی باشندے شامل ہیں داعش میں:شام

پانچ ہزار آئغور داعش میں شامل ہو کر شام میں لڑ رہے ہیں جو ایک پریشان کن مسئلہ ہے جبکہ حقوق انسانی تنظیموں کا کہنا ہے کہ یہ لوگ چین کے ریاستی جبر سے بچنے کے لیے ترکی میں پناہ لیے ہوئے ہیں۔


ولایت پورٹل:رائٹرز کی رپور ٹ کے مطابق چین میں تعینات شام کے سفیر عماد مصطفی نے کہا ہے کہ چینی حکومت کو اس مسئلہ کوسنجیدگی سے لینا چاہیے کہ  آئغور قوم کے لوگ  داعش میں شامل ہیں لیکن ان میں سے اکثر اپنی الگ شناخت کے ساتھ شام میں لڑ رہے ہیں تا کہ اپنی تحریک آزادی چین کے سامنے لاسکیں ،عماد نے کہا ہے  اگرچہ ہمیں ان کے درست اعداد شمارنہیں معلوم لیکن اندازہ ہے کہ چار سے پانچ ہزار آئغور داعش میں شامل ہو کر شام میں لڑ رہے ہیں  جو ایک پریشان کن مسئلہ ہے  جبکہ حقوق انسانی تنظیموں کا کہنا ہے کہ یہ لوگ چین کے ریاستی جبر  سے بچنے کے لیے ترکی میں پناہ لیے ہوئے ہیں۔
ایسنا




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17