Friday - 2018 Oct. 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187278
Published : 16/5/2017 17:54

تمام ادیان اور فرقوں کے نزدیک تصور مہدویت

اگر آپ امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی طرف متوجہ ہوئے تو خالی ہاتھ واپس نہیں آئیں گے،اگرانصاف کے ساتھ احادیث کی طرف توجہ دی جائےتو حضرت امام مہدی عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کےمقدس وجود کے انکارکا کوئی راستہ نہیں ہے۔

ولایت پورٹل:حوزہ علمیہ کے استاد آیت اللہ علی شیخ موحد نے امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی ولادت باسعادت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام فرقے اور ادیان مسئلہ انتظار کو اہمیت دیتے ہیں تاہم مکتب تشیع میں اس موضوع کو بہت زیادہ اہمیت دی جاتی ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ اہل سنت بھی عقیدہ رکھتے ہیں کہ آل ہاشم علیہ السلام کا ایک شخص ظہورکرے گا اور دنیا کو عدل و انصاف سے بھردے گا،اہم نکتہ یہ ہےکہ مکتب تشیع میں امام علیہ السلام کی تمام خصوصیات کا ذکرکیا گیا ہےتاکہ کوئی امامت کا دعویٰ نہ کرسکے، یہاں تک کہ پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ و سلم، حضرت زہرا سلام اللہ علیہا اور ائمہ اطہارعلیہم السلام نے مختلف زمانوں اورحساس ترین حالات میں اس حجت خدا کے بارے میں احادیث بیان فرمائی ہیں۔
آیت اللہ موحد نےکہا ہےکہ برے ترین بادشاہ بھی مسئلہ مہدویت کو لوگوں سے دور نہیں کرسکے ہیں کیونکہ یہ ایک غیبی مسئلہ ہے۔
انہوں نےآخرمیں کہا ہےکہ اگر آپ امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کی طرف متوجہ ہوئے تو خالی ہاتھ واپس نہیں آئیں گے،اگرانصاف کے ساتھ احادیث کی طرف توجہ دی جائےتو حضرت امام مہدی عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کےمقدس وجود کے انکارکا کوئی راستہ نہیں ہے۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Oct. 19