Tuesday - 2018 Oct. 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187604
Published : 31/5/2017 16:21

میٹھا ذیابیطس کے علاوہ بھی خطرناک بیماریوں کا سبب

یونیورسٹی آف ٹیکساس کے ماہرین نے میٹھی اشیاء کے استعمال سے انسانی صحت پر پڑنے والے اثرات، خصوصی طور پر ذیابیطس اور کینسر جیسے امراض کے درمیان تعلقات سے متعلق تحقیقات کی ہیں،ماہرین نے خصوصی طور پر میٹھی اشیائوں کے استعمال، پھیپھڑوں اور غدود کے کینسر کے درمیان تعلق کا جائزہ لیا ہے۔

ولایت پورٹل:اس میں کوئی شک نہیں کہ میٹھی اشیاء ذیابیطس سمیت وزن بڑھانے اور جوڑوں کے درد جیسی بیماریاں دیتی ہیں، تاہم ایک حالیہ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ کئی میٹھی اشیاء کینسر کا بھی باعث بنتی ہیں،چاکلیٹ اور دیگر میٹھی چیزوں سے تیار شدہ کیک، مشروب، کھانے، مشروب اور دیگر اشیاء نہ صرف ذیابیطس بلکہ پھیپھڑوں کے کینسر سمیت دیگر بیماریوں کا سبب بھی بنتے ہیں،یونیورسٹی آف ٹیکساس کے ماہرین نے میٹھی اشیاء کے استعمال سے انسانی صحت پر پڑنے والے اثرات، خصوصی طور پر ذیابیطس اور کینسر جیسے امراض کے درمیان تعلقات سے متعلق تحقیقات کی ہیں،ماہرین نے خصوصی طور پر میٹھی اشیائوں کے استعمال، پھیپھڑوں اور غدود کے کینسر کے درمیان تعلق کا جائزہ لیا ہے ،سائنس جرنل نیچر میں شائع تحقیقی رپورٹ کے مطابق ماہرین نے ایٹلاس کینسر سینٹر کے 11 ہزار مریضوں کے ڈیٹا کا جائزہ لیا، جو کینسر کے 33 مختلف اقسام میں مبتلا تھے،ڈیٹا کا جائزہ لینے کے بعد پتہ چلا کہ غدود اور پھیپھڑوں کے کینسر کے مرض میں مبتلا افراد کو گلوکوز، پروٹین اور مصنوعی شگر کی مدد سے تیار کردہ چیزوں کی وجہ سے کینسر ہوا،ماہرین کے مطابق مصنوعی شگر اور گلوکوز انسانی جسم کی خلیوں میں ایسے جراثیم پیدا کرنے کے لیے بنیادی توانائی فراہم کرتے ہیں، جو آگے چل کے پھیپھڑوں اور غدود کے کینسر کا سبب بنتے ہیں۔

etemaaddaily


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 23