Monday - 2018 August 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187627
Published : 1/6/2017 15:19

تہران سے فلسطین تک مزاحمتی لکیر

عراق اور شام کی مزاحمتی تنظمیوں کی بالادستی کو روکنے کے لیے امریکہ کی تمام تر کوششوں اور پروپگنڈوں کے باوجود ان تنظیموں نے تہران سے فلسطین تک مزاحمتی لکیر یعنی ہلال مقاومت پر کنٹرول کرنے کے لیے پختہ ارادہ کر رکھا ہے۔


ولایت پورٹل:لبنان کے روزنامہ الاخبار ایڈیڑ نے اس اخبار میں اپنا ایک مضمون شائع کیا ہے  جس میں  شامی فوج کی پیشقدمی اور عراقی رضاکار فوج حشد الشعبی کا شام کی سرحدوں تک پہنچ جانے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھاہے :جب اسرائیل کے ساتھ 33روزہ جنگ میں حزب اللہ کو کامیابی ملی تو امریکہ اور اسرائیل کے  پلانوں پو پانی پھر گیا نیزمزاحمت کی اہمیت بھی واضح ہوگئی لیکن اس کے بعد امریکہ اور اسرائیل نے اپنی پالیسی کو بدلااور نئے دشمن کے ساتھ میدان میں اترے جس کامقصد ہلال مقامت کو مظبوط ہونے سے روکنا تھا جس کے لیے اس نے اس کے سب اراکین کو میدان میں اتارنا تھا تو اس نے شام اور عراق میں جنگ چھیڑی جہاں آج چھ سال کے بعد وہ اس نتیجہ پر پہنچے ہیں کہ اب شام اور عراق کی مزاحمتی تحریک کو ایک نہ ہونے دیا جائے کیوں کہ اس سے  بھی ہلال مقاومت مظبوط ہوگا لیکن ان کی یہ امید بھی خاک ہی میں ملتی ہوئی نظر آرہی ہے اس لیے کہ حشد الشعبی ام جریص تک پہنچ چکی ہے۔
ایرنا





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 August 20