Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187812
Published : 11/6/2017 16:27

صلح امام حسن(ع):

اگر حسن(ع) کی جگہ خود علی(ع) بھی ہوتے تو صلح ہی کرتے:رہبر انقلاب

حسین بن علی(ع) بھی اس صلح میں امام حسن(ع) کے ساتھ شریک تھے، صرف امام حسن(ع)نے صلح نہیں کی تھی، بلکہ امام حسن(ع)اور امام حسین(ع)دونوں نے کی تھی،ہاں امام حسن(ع)آگے اور امام حسین(ع)پیچھے تھے،امام حسین(ع)، صلحِ امام حسن(ع) کے نظریہ کا دفاع کرنے والے تھے۔

ولایت پورٹل:صلح امام حسن(ع) کے باب میں یہ مسئلہ ہم نے بارہا بیان کیا ہے اور دوسرے لوگوں نے اپنی کتابوں میں لکھا ہے کہ جو بھی امام حسن(ع) کی جگہ ہوتا یہاں تک کہ اگر امیرالمؤمنین(ع) بھی ان کی جگہ ہوتے اور اس وقت کے حالات سے دوچار ہوتے تو وہی کرتے جو امام حسن(ع)نے کیا ہے،کوئی شخص یہ نہیں کہہ سکتا کہ امام حسن(ع)کے کام کے بارے میں سوال اٹھتا ہے،نہیں آپ کا کام سوفیصد منطقی استدلال کے مطابق ہے، اس سے نہیں بچا جاسکتا تھا،آل رسول(ص) کے درمیان سب سے زیادہ پرجوش کون ہے؟ سب سے زیادہ شہادت آمیز زندگی کس کی ہے؟ دشمن کے مقابلہ میں دین کی حفاظت کے لئے غیرت مند ترین کون تھا؟ حسین بن علی(ع) تھے۔ وہ بھی اس صلح میں امام حسن(ع) کے ساتھ شریک تھے، صرف امام حسن(ع)نے صلح نہیں کی تھی، امام حسن(ع)اور امام حسین(ع)دونوں نے کی تھی،ہاں امام حسن(ع)آگے اور امام حسین(ع)پیچھے تھے،امام حسین(ع)، صلحِ امام حسن(ع) کے نظریہ کا دفاع کرنے والے تھے،جب ایک خصوصی نشست میں آپ(ع) کے قریبی آدمی نے(اس شور و ہنگامہ کے موقع پر) امام حسن(ع)پر کوئی اعتراض کیا تو امام حسین(ع)نے اسے سرزنش کی اور فرمایا:وَ غَمَزَ الْحُسَیْنُ حُجُرَ۔ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ امام حسن(ع) کی جگہ امام حسین(ع) ہوتے تو یہ صلح نہ ہوتی۔ ہرگز نہیں ہے، امام حسین(ع)، امام حسن(ع) کے ساتھ تھے اور یہ صلح ہوئی اوربالفرض اگر امام حسن(ع)نہ ہوتے تو ان حالات میں امام حسین(ع) تنہا ہوتے تب بھی یہی ہوتا اور صلح ہوتی۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22