Friday - 2018 july 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187836
Published : 13/6/2017 17:4

شب قدر رہبر انقلاب کی نگاہ میں:

شب قدر، انسان کے لئے نئے سال کا نقطہ آغاز ہے:رہبر انقلاب

مسلمان، رمضان کے مہینہ سے نورانیت حاصل کرتا ہے، رمضان کے مہینہ میں، روزے، دعاء و ذکر و ثنائے خداوندی، تلاوت قرآن مجید اور دیگرخوبیوں اور حسنات کے سبب، مؤمن کا دل نورانی ہوجاتا ہے، آدمی کے دلوں پر بیٹھے گرد و غبار کا خاتمہ ہوجاتا ہے، حقیقت امر یہ ہے کہ ایک مؤمن انسان شب قدر سے نئے سال کا آغاز کرتا ہے۔

ولایت پورٹل:رہبر انقلاب کا یہ پیغام در واقع آپ کے عید کے ایک خطبہ سے اقتباس ہے جس میں آپ نے رمضان المبارک کی عبادتوں ،ریاضتوں اور شب ہائے قدر کی اہمیت کا تذکرہ  فرمایا تھا۔
آغاز سخن:سبھی نماز گذار بھائیوں ، بہنوں، ملت ایران نیز دنیا کے مسلمانوں اور عظیم امت اسلامیہ کو عید سعید فطر کی مبارکباد پیش کرتا ہوں۔
مسلمان، رمضان کے مہینہ سے نورانیت حاصل کرتا ہے، رمضان کے مہینہ میں، روزے، دعاء و ذکر و ثنائے خداوندی، تلاوت قرآن مجید اور دیگرخوبیوں اور حسنات کے سبب، مؤمن کا دل نورانی ہوجاتا ہے، آدمی کے دلوں پر بیٹھے گرد و غبار کا خاتمہ ہوجاتا ہے، حقیقت امر یہ ہے کہ ایک مؤمن انسان شب قدر سے نئے سال کا آغاز کرتا ہے، شب قدر میں کاتبین الٰہی، پورے سال کے دوران اس کے مقدر کا حال تحریر کردیتے ہیں،اس وقت سے انسان ایک نئی زندگی اور ایک نئے مرحلہ اور نئے سال میں دوبارہ حیات لے کر دنیا میں قدم رکھتا ہے، تقویٰ کا ذخیرہ لے کر ایک نئی راہ پر گامزن ہوجاتا ہے اور راستہ کے دوران مختلف مقامات پر اس کی یاد کی دوبارہ بحالی کے لئے طرح طرح کی راہنمائیاں قراردی گئی ہیں اور عید فطر کا دن بھی راستہ کے درمیان کا ایک پڑاؤ اور نشان ہے اس یاد دہانی کے لئے کہ اس دن کو غنیمت سمجھنا چاہیئے۔
عید فطر کی یہ نماز، رمضان کے مہینہ میں نعمت الٰہی کے شکرانے کا معنی رکھتی ہے،اس نئی ولادت اور حیات نو کا شکرانہ ہے،عید فطر کی نماز میں ہم پیہم خداوندعالم سے یہ عرض کرتے ہیں کہ:«اَدْخِلْنِیْ فِیْ کُلِّ خَیْرٍ اَدْخَلْتَ فِیْہِ مُحَمَّداً وَآلَ مُحَمَّدٍ»
ہمیں اس ایمان و اخلاق اور عمل کی پاک و پاکیزہ جنت میں جگہ دے کہ جہاں پر تونے ان منتخب شدہ بزرگوں کو جگہ دے رکھی ہے:وَاَخْرِجْنِیْ مِنْ کُلِّ سُوٓئٍ اَخْرَجْتَ مِنْہُ مُحَمَّداً وَّآلَ مُحَمَّدٍ صَلَوَاتُکَ عَلَیْہِ وَعَلَیْہِمْ۔
اس غیر پسندیدہ دوزخ عمل سے غیر پسندیدہ اخلاق اور عقیدے سے کہ جن سے عالم خلقت کے ان برگزیدہ اور منتخب بندوں کو دور اور محفوظ رکھا ہے ہمیں بھی ان سے دور اور محفوظ رکھ۔ عید فطر کے دن ہم اس عظیم مقصد کو اپنے لئے واضح اور مجسم کرتے ہیں اور اس بابت خداوند عالم سے درخواست طلب کرتے ہیں، البتہ اس سلسلہ میں ہمارا بھی فریضہ ہے کہ کوشش اور جد و جہد کریں کہ اس صراط مستقیم پر ثابت قدم رہیں اور یہ وہی مطلوبہ تقویٰ ہے۔
 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 july 20