Sunday - 2018 july 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187909
Published : 18/6/2017 15:10

رمضان المبارک کی تیئیسویں شب کے مخصوص اعمال

اس مبارک شب میں سورہ عنکبوت وسورہ روم پڑھے کہ امام جعفرصادق(ع)نے قسم کھاتے ہوئے فرمایا کہ اس رات ان دو سوروں کا پڑھنے والا اہل جنت میں سے ہے۔

ولایت پورٹل:ہدیۃ الزائر میں منقول ہے کہ یہ رات شب قدر کی پہلی دو راتوں سے افضل ہے اور بہت سی روایات سے معلوم ہوتا ہے کہ شب قدر یہی رات ہے اور یہ بات حقیقت کے قریب تر ہے،اس رات حکمت الٰہی کے مطابق کائنات کے تمام امور مقدر ہوتے ہیں پس اس میں پہلی دو راتوں کے مشترکہ اعمال بجا لائے اور ان کے علاوہ اس رات کے چند مخصوص اعمال بھی ہیں:
۱۔سورہ عنکبوت وسورہ روم پڑھے کہ امام جعفرصادق(ع)نے قسم کھاتے ہوئے فرمایا کہ اس رات ان دو سوروں کا پڑھنے والا اہل جنت میں سے ہے۔
۲۔سورہ حٰم دخان پڑھے :
۳۔ ایک ہزار مرتبہ سورہ قدر پڑھے:
۴۔اس رات خصوصًا اور دیگر اوقات میں عمومًا یہ دعا پڑھے اَللّٰھُمَّ کُنْ لِوَلیِّکَ ...
۵۔ یہ دعا پڑھے:
اَللّٰہُمَّ امْدُدْ لِی فِیْ عُمُرِی وَ أَوْسِعْ لِی فِی رِزْقِی وَ أَصِحَّ لِی جِسْمِی وَ بَلِّغْنِی أَمَلِی وَ إِنْ کُنْتُ مِنَ الْأَشْقِیَآءِ فَامْحُنِی مِنَ الْأَشْقِیَاءِ وَ اکْتُبْنِی مِنَ السُّعَدَاءِ فَإِنَّکَ قُلْتَ فِی کِتَابِکَ الْمُنْزَلِ عَلَی نَبِیِّکَ الْمُرْسَلِ صَلَوَاتُکَ عَلَیْہِ وَ آلِہٖ یَمْحُو اللَّہُ مَا یَشَآءُ وَ یُثْبِتُ وَ عِنْدَہٗ  أُمُّ الْکِتَابِ
۶۔ یہ دعا بھی پڑھے:
اَللّٰہُمَّ اجْعَلْ فِیْمَا تَقْضِی وَ فِیمَا تُقَدِّرُ مِنَ الْأَمْرِ الْمَحْتُومِ وَ فِیمَا تَفْرُقُ مِنَ الْأَمْرِ الْحَکِیْمِ فِی لَیْلَةِ الْقَدْرِ مِنَ الْقَضَاءِ الَّذِی لَا یُرَدُّ وَ لا یُبَدَّلُ أَنْ تَکْتُبَنِی مِنْ حُجَّاجِ بَیْتِکَ الْحَرَامِ فِی عَامِی ہَذَا الْمَبْرُورِ حَجُّہُمْ، الْمَشْکُورِ سَعْیُہُمْ اَلْمَغْفُورِ ذُنُوبُہُمْ، اَلْمُکَفَّرِ عَنْہُمْ سَیِّئَاتُہُمْ، وَ اجْعَلْ فِیمَا تَقْضِی وَ تُقَدِّرُ أَنْ تُطِیْلَ عُمْرِی وَ تُوَسِّعَ لِیْ فِی رِزْقِی
۷۔ یہ دعا بھی جو کتاب الاقبال میں نقل ہوئی ہے پڑھے:
یَا بَاطِنًا فِی ظُہُورِہٖ وَ یَا ظَاہِرًا فِی بُطُونِہٖ وَ یَا بَاطِنًا لَیْسَ یَخْفٰی، وَ یَا ظَاہِرًا لَیْسَ یُریٰ، یَا مَوْصُوْفًا لَا یَبْلُغُ بِکَیْنُونَتِہٖ مَوْصُوفٌ،  وَ لَا حَدٌّ مَحْدُودٌ، وَ یَا غَائِبًا [غَائِبُ‏] غَیْرَ مَفْقُوْدٍ، وَ یَا شَاہِدًا [شَاہِدُ] غَیْرَ مَشْہُوْدٍ، یُطْلَبُ فَیُصَابُ، وَ لَا یَخْلُو [لَمْ یَخْلُ‏] مِنْہُ السَّمَاوَاتُ وَ الْأَرْضُ وَ مَا بَیْنَہُمَا طُرْفَةَ [طَرْفَةَ] عَیْنٍ لَا یُدْرَکُ بِکَیْفٍ [بِکَیْفَ‏] وَ لا یُؤَیَّنُ بِأَیْنٍ [بِأَیْنَ‏] وَ لا بِحَیْثٍ [بِحَیْثُ‏] أَنْتَ نُورُ النُّورِ، وَ رَبُّ الْأَرْبَابِ، أَحَطْتَ بِجَمِیعِ الْأُمُورِ، سُبْحَانَ مَنْ لَیْسَ کَمِثْلِہٖ شَیْ‏ءٌ وَ ہُوَ السَّمِیعُ الْبَصِیْرُ، سُبْحَانَ مَنْ ہُوَ ہٰکَذَا وَ لَا ہٰکَذَا غَیْرُہٗ۔
اس کے بعد جو چاہے اللہ سے مانگے۔

 
 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 july 22