Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 187948
Published : 20/6/2017 13:47

حضرت مہدی(عج) کےاصحاب کےامتحان کی کیفیت

امام صادق علیہ السلام نےفرمایا: اللہ تعالیٰ نے نہرکے ذریعے حضرت موسیٰ کےاصحاب کا امتحان لیا تھا، جیسا کہ اللہ تعالیٰ فرماتا ہے: «إِنَّ اللّهَ مُبْتَلِيكُم بِنَهَرٍ»۔ حضرت قائم عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کےاصحاب کا بھی اسی طرح امتحان لیا جائےگا۔


ولایت پورٹل:
قرآن کریم سورہ مبارکہ بقرہ کی آیت نمبر۲۴۹ میں ارشاد فرماتا ہے: «فَلَمَّا فَصَلَ طَالُوتُ بِالْجُنُودِ قَالَ إِنَّ اللَّهَ مُبْتَلِيكُمْ بِنَهَرٍ فَمَنْ شَرِبَ مِنْهُ فَلَيْسَ مِنِّي وَمَنْ لَمْ يَطْعَمْهُ فَإِنَّهُ مِنِّي إِلَّا مَنِ اغْتَرَفَ غُرْفَةً بِيَدِهِ ۚ فَشَرِبُوا مِنْهُ إِلَّا قَلِيلًا مِنْهُمْ ۚ فَلَمَّا جَاوَزَهُ هُوَ وَالَّذِينَ آمَنُوا مَعَهُ قَالُوا لَا طَاقَةَ لَنَا الْيَوْمَ بِجَالُوتَ وَجُنُودِهِ ۚ قَالَ الَّذِينَ يَظُنُّونَ أَنَّهُمْ مُلَاقُو اللَّهِ كَمْ مِنْ فِئَةٍ قَلِيلَةٍ غَلَبَتْ فِئَةً كَثِيرَةً بِإِذْنِ اللَّهِ ۗ وَاللَّهُ مَعَ الصَّابِرِينَ.»
جب طالوت لشکرلےکرروانہ ہوا تو اس نےکہا: اللہ ایک نہرسے تمہاری آزمائش کرنے والا ہے،پس جو شخص اس میں سے پانی پی لے وہ میرا نہیں اور جو اسے نہ چکھے وہ میرا ہوگا مگر یہ کوئی صرف ایک چلو اپنے ہاتھ سے بھرلے(توکوئی مضائقہ نہیں) پس تھوڑے لوگوں کے سوا سب نے اس(نہر) میں سے پانی پی لیا، پس جب طالوت اور اس کےایمان لانے والے ساتھی نہرپارکرگئےتوانہوں نے (طالوت سے) کہا:آج ہم میں جالوت اوراس کے لشکرکا مقابلہ کرنےکی طاقت نہیں ہے، مگرجو لوگ یہ یقین رکھتے تھےکہ انہیں خدا کے روبر و ہونا ہے وہ کہنے لگے: بسا اوقات ایک قلیل جماعت نے خدا کے حکم سے بڑی جماعت پرفتح حاصل کرلی ہے او اللہ صبرکرنے والوں کے ساتھ ہے۔
امام باقرعلیہ السلام نےاس آیہ مبارکہ کے بارے میں فرمایا ہے: جو افراد آخرتک طالوت کے وفادار رہےان کی تعداد ۳۱۳افراد تھی۔(۱)
امام صادق علیہ السلام نےفرمایا: اللہ تعالیٰ نے نہرکے ذریعے حضرت موسیٰ کےاصحاب کا امتحان لیا تھا، جیسا کہ اللہ تعالیٰ فرماتا ہے: «إِنَّ اللّهَ مُبْتَلِيكُم بِنَهَرٍ»۔ حضرت قائم عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کے اصحاب کا بھی اسی طرح امتحان لیا جائےگا۔(۲)
حوالہ جات:
۱۔ نورالثقلین، ج1 ص 251            
۲ ۔ الغیبة ،طوسی، ص 472
حجۃ الاسلام محسن قرائتی کی کتاب( پرتوی ازآیات مہدوی ،ص۶۵و۶۶) سےاقتباس



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21