Wed - 2018 Dec 19
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189523
Published : 11/9/2017 14:56

حجت الاسلام مولانا سید اطہر عباس کی وفات پر نمائندہ ولی فقیہ کا تعزیتی پیغام

جناب مولانا سید اطہر عباس رضوی صاحب اسلامی انقلاب کے اقدار کے مروج اور امام خمینی رضوان اللہ تعالٰی علیہ و رہبر انقلاب اسلامی و مراجع کرام کی راہ کے مدافع تھے۔

باسمہ سبحانہ تعالی
خطیب اہلبیتؑ اور عالم با عمل مرحوم جناب مولانا سید اطہر عباس رضوی صاحب کی ناگہانی رحلت کی خبر غم واندوہ کا سبب ہوئی. مرحوم خلیق، ہمدرد اور قادر البیان خطیب تھے اور مسلسل مغربی بنگال ،یوپی، بہار اور ہندوستان کے دیگر صوبوں میں سفر کرکے مومنین کرام کو فیضیاب کرتے رہتے تھے ، چنانچہ پورے ہندوستان میں آپکے عقیدت مند پائے جاتے ہیں۔
  آپ اسلامی انقلاب کے اقدار کے مروج اور  امام خمینی رضوان اللہ تعالٰی علیہ و رہبر انقلاب اسلامی و مراجع کرام کی راہ کے مدافع تھے.
آپ فصیح و بلیغ خطیب، اخلاق  حسنہ و اعلی علمی مدارج کے مالک تھے ۔اس کے علاوہ آپ نے
اپنی شریک حیات کے ساتھ مل کر شہر کلکتہ میں مکتب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی بھی تاسیس کی تھی جس میں سیکڑوں بچیوں نے گزشتہ برسوں میں دینی معارف سیکھے اور ہر سال آپ مختلف علاقوں میں سمر تعلیمی کیمپ بھی لگاتے تھے  اس طرح آپ جوان نسل کی تربیت میں کوشاں تھے ۔
بزرگ علماء اہلسنت سے تعمیری اور بہترین روابط کے ساتھ ساتھ صوبہ بنگال کے حکام اور عہدہ داروں سے بھی آپکے مراسم تھے اور انکے نزدیک آپ ایک باوقار شخصیت کے طور پر پہچانے جاتے تھے اور بجا طور پر آپکی ذات اس علاقہ میں شیعوں کے لئیےایک  بہترین پشت پناہ تھی۔
 اس عالم ربانی کا انتقال یقینا ایک بڑا نقصان ہے۔ لہذا اپنے اوپر لازم سمجھتا ہوں کہ اس عظیم خدمت گزار کے فقدان پر حضرت بقیہ اللہ الاعظم، حوزات علمیہ اور ہندوستان کے  عالی مرتبہ علماء و مومنین خصوصاً مرحوم کے اہل خانہ و غمزدہ فرزندوں اور ان کے مکتب کے طلاب و طالبات کی خدمت میں تعزیت پیش کروں.
خداوند متعال کی بارگاہ میں مرحوم کے لئے مغفرت و رحمت واسعہ کے ہمراہ انکے پسماندگان کے لئیے صبر و اجرکا طالب ہوں ۔
مہدی مہدوی پور
۱۱/۹/۲۰۱۷



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 19