Wed - 2018 Oct. 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189796
Published : 2/10/2017 16:42

نصر اللہ جو کہتے ہیں کر کے دکھاتے ہیں:عطوان

ہماری جنگ صہیونیوں سےہے نہ کہ یہودیوں سے، یہ امریکہ ہے جو یہودیوں کو جنگ میں ایندھن کے طور پر استعمال کرنا چاہتا ہے۔


ولایت پورٹل:معروف عرب نامہ نگار  عبدالباری عطوان نے عاشور کے دن کی سید حسن نصر اللہ کی تقریر کو غور طلب جانتے ہوئے کہا ہے کہ  نصراللہ ایسے انسان ہیں کہ  جو کہتے ہیں اس پر عمل  کرتے ہیں  لہذا ان کی باتوں کو سنجیدگی سے لینا چاہیے، عطوان نے   عاشور کے دن سید حسن نصر اللہ کی طرف سے صہیونیوں کو دی جانے والی دھمکیوں   کا تجزیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سید کی  یہ تقریر باقی تقریروں سے ہٹ کر تھی اس میں انھوں پہلی بار یہودیت کو صہیونیزم سے الگ کیا ہے اور کہا ہے کہ صہیونزم ایک غاصب اور نسل پرست  گروہ ہے جبکہ یہودیت ایک قابل احترام آسمانی دین ہے لہذا ہماری جنگ صہیونیوں سے نہ کہ یہودیوں سے یہ امریکہ ہے جو یہودیوں کو ایندھن کے طور پر استعمال کرنا چاہتا ہے،عطوان نے حزب اللہ کے سیکریٹری جنرل کی تقریر کا مزید تجزیہ کرتے ہوئے کہا : سید نے  عاشور کو فداکاری اور مظلومین کے دفاع کا دن قرار دیتے ہوئے جنگ کے بارے میں اس طرح بات کی گویا کل ہی سے جنگ شروع ہونے والی ہے، انھوں نے کہا نیتن یاہو جنگ کو شروع تو کرے گا لیکن اس کو ختم کرنا اس کے بس میں نہیں ہوگا، اسی طرح انھوں نے مزید کہا کہ امریکہ کا ایران کے ایٹمی معاہدہ سےنکلنا اعلان جنگ  ہے اس لیے کہ پھر ایران پابندیوں سے پہلی والی حالت میں پلٹ جائے گا۔
Irib.ir



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Oct. 24