Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189979
Published : 12/10/2017 19:36

سپاہ پاسدارن پر پابندی کا مطلب ملک کے خلاف اعلان جنگ:جوہری توانائی ایجنسی کے سربراہ

کسی بھی ملک کی فوج اور مسلح تنظیمیں اس ملک کی سالمیت اور امنیت کی ضامن ہوتی ہیں لہذا ان کے خلاف کسی بھی اقدام کا مطلب اس ملک کے خلاف اقدام سمجھا جاتا ہے


ولایت پورٹل:ایرانی جوہری توانائی ایجنسی کے سربراہ علی اکبر صالح جو اس وقت برطانیہ کے وزیر خارجہ کے دعوت پر لند کے دورہ پر ہیں  جہاں انھوں نے  بین الاقوامی تجزیہ نگاروں اور ذرائع ابلاغ کے نمائندں کے ساتھ ایک پریس کانفرانس میں  ایران سے متعلق کئی اہم سیاسی اور بین الاقوامی موضوعات پر پوچھے جانے والے سوالات کے جواب دیے جن میں ایک سوال  یہ بھی تھا کہ اگر امریکہ کی طرف سے سپاہ پاسداران پر پابندی عائد کی جاتی ہے تو اس سلسلہ میں ایران کا رد عمل کیا ہوگا جس کے جواب میں انھوں نے کہا:اگر ایسا  ہوتا ہے تو یہ امریکی  حکومت ایران دشمنی کو منھ بولتا ثبوت ہوگا  اور چونکہ کسی بھی ملک کی فوج اور مسلح تنظیمیں اس ملک کی سالمیت اور امنیت کی ضامن ہوتی ہیں لہذا ان کے خلاف کسی بھی اقدام کا مطلب اس ملک کے خلاف اقدام سمجھا جاتا ہے۔
برنا




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17