Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190279
Published : 30/10/2017 6:43

داعش اور طالبان میں کوئی فرق نہیں ہے:نصیر نور

افغانستان کے سفیر نصیر احمد نور نے افغانستان میں امریکہ کی اسٹراٹیجک کی خصوصیات بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ طالبان اور داعش میں کوئی فرق نہیں ہے عراق اور شام میں سرگرم غیر ملکی دہشت گرد شکست کے بعد افغانستان منتقل ہورہے ہیں۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق تہران میں افغانستان کے سفیر نصیر احمد نور نے افغانستان میں امریکہ کی اسٹراٹیجک کی خصوصیات بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ طالبان اور داعش میں کوئی فرق نہیں ہے عراق اور شام میں سرگرم غیر ملکی دہشت گرد شکست کے بعد افغانستان منتقل ہورہے ہیں۔
افغانستان کے سفیر نے افغانستان میں جاری دہشت گردی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ جیسا کہ افغان حکومت نے بارہا اعلان کیا ہے کہ افغانستان میں جاری دہشت گرد اور دہشت گردوں کا تعلق  دوسرے ممالک سے ہے اور امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی افغانستان کے بارے میں  اپنی پالیسی میں اس بات کی طرف صاف اشارہ کیا ہے کہ دہشت گرد گروہوں کا تعلق دوسرے ممالک سے ہے۔
افغان سفیر نصیر احمد نور نے افغانستان کے بارے میں امریکہ کی پالیسی پر افغانستان کے سابق صدر حامد کرزائی کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ افغانستان ایک آزاد ملک ہے اور اس ملک میں ہر شخص کو اپنے نظریات بیان کرنے کا پورا حق ہے حامد کرزائی بھی اسی آزادی کے پیش نظر افغان حکومت اور امریکہ پر تنقید کرتے رہتے ہیں۔
افغان سفیر نے میرزا اولنگ علاقہ  میں شیعہ مسلمانوں پر دہشت گردوں کے حملے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرزا اولنگ علاقہ میں طالبان اور داعش نے شیعوں پر ملکر حملہ کیا  اور طالبان اور داعش میں کوئی فرق نہیں ہے بعض علاقوں میں طالبان نے اپنا سفید پرچم اتار کر داعش کا سیاہ پرچم نصب کردیا ہے۔



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18