Wed - 2018 Nov 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190348
Published : 4/11/2017 16:44

تلوار پر خون کی کامیابی کی بنیادی وجہ جناب زینب سلام اللہ علیہا ہیں:رہبر انقلاب

اس کامیابی کی عامل اور سبب جناب زینب سلام اللہ علیہا تھیں، ورنہ کربلا میں خون تو بہہ گیا تھا اور قصہ ختم ہوجاتا! لیکن جو چیز اس ظاہری لشکری شکست کو دائمی اور قطعی کامیابی میں بدلنے کا موجب ہوئی تھی وہ جناب زینب کبری سلام اللہ علیہاکی موجودگی اور کردار تھا کہ جس کو انہوں نے نبھایا۔یہ بڑی اہم بات ہے۔


ولایت پورٹل:جناب زینب کبریٰ سلام اللہ علیہا تاریخ کی ایسی نمایاں اور مثالی خاتون ہیں کہ جن کی وجہ سے روشن تاریخ کے ایک اہم موڑ پر ایک خاتون کی موجودگی کی عظمت کی نشاندہی ہوتی ہے،یہ جو کہا جاتا ہے کہ عاشور کے دن کربلا میں تلوار پر خون کی کامیابی ہوئی(جو کہ واقعی میں ہوئی)اس کامیابی کی عامل اور سبب جناب زینب سلام اللہ علیہا تھیں، ورنہ کربلا میں خون تو بہہ گیا تھا اور قصہ ختم ہوجاتا! لیکن جو چیز اس ظاہری لشکری شکست کو دائمی اور قطعی کامیابی میں بدلنے کا موجب ہوئی تھی وہ جناب زینب کبری سلام اللہ علیہاکی موجودگی اور کردار تھا کہ جس کو انہوں نے نبھایا۔یہ بڑی اہم بات ہے۔
اس واقعہ نے ثابت کردیا کہ جناب زینب سلام اللہ علیہا کی موجودگی اور ان کا کردارضمنی نہیں ہے، بلکہ ایک خاتون ہونے کے ناطہ ان کی موجودگی حتی تاریخ میں اہم موڑ رکھتی ہے،خواتین کی موجودگی اور ان کے کردار کے سلسلہ میں قرآن مجید ناطق ہے، لیکن یہ نزدیکی تاریخ کا واقعہ ہے،گذشتہ اقوام کی بات نہیں ہے بلکہ ایک قابل محسوس تازہ واقعہ ہے، جب انسان جناب زینب سلام اللہ علیہا کو دیکھتا ہے تو انہیں میدان میں حیران کن اور درخشاں عظمت کے ساتھ موجود پاتا ہے، انہوں نے ایسا کارنامہ کردکھایا کہ دشمن جو علی الظاہر لشکری کارزار میں کامیاب ہوگیا تھا اور اس نے اپنے مخالفین کا قلع قمع کردیا تھا اور کامیابی کے نشہ میں چور طاقت و اقتدار کے تخت پر تکیہ جمائے بیٹھا تھا، اس قدر ذلیل و رسوا ہوا کہ ابدی ذلت کا داغ اپنی پیشانی پر لگا بیٹھا اور جناب زینب سلام اللہ علیہا نے اس کی کامیابی کو ابدی شکست میں بدل کررکھ دیا۔جناب زینب سلام اللہ علیہا کا کارنامہ یہ تھا۔آپ نے ثابت کردیا کہ زنانہ حجاب و عفت کو ایک مجاہدانہ عزت اور عظیم جہاد میں بدلا جاسکتا ہے۔

 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 14