Wed - 2018 Nov 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190366
Published : 6/11/2017 8:0

سعد حریری کے استعفٰی پر سید مقاومت کا بڑا بیان؛استعفے کی اصل وجہ سعودی عرب

سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ سعد حریری نے سعودی عرب کے شدید دباؤ میں استعفی پیش کیا ہے کیونکہ سعودی عرب کے لبنان میں کچھ اہداف ہیں جن کو سعد حریری پایہ تکمیل تک پہنچانے میں ناکام رہے جس کے بعد سعودی عرب نے اس سے استعفی پیش کرنے کے لئے دباؤ ڈالا اور انھوں نے بھی سعودی عرب میں ہی استعفی پیش کردیا۔


ولایت پورٹل:المنار کی رپورٹ کے مطابق حزب اللہ کے جنرل سکریٹری سید حسن نصر اللہ نے لبنان کے مستعفٰی وزير اعظم سعد حریری کے سعودی عرب میں جاکر استعفی دینے کو سعودی عرب کی لبنان کے امور میں بڑے پیمانے پر مداخلت کا واضح  ثبوت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ لبنانی عوام ، لبنانی حکومت اور لبنان کے کسی بھی شخص کو حریری کے استعفی کی اصلی حقیقت کا کوئی علم نہیں ہےسعد حریری کے استعفی کی علت سعودی عرب میں تلاش کرنی چاہیئے۔
حزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا کہ ہمارا تعاون مستعفی وزیر اعظم کے ساتھ جاری تھا،وزیر اعظم سعد حریری جب سعودی عرب کے حالیہ پہلے دورے سے وطن واپس آئے تو وہ اس دورے  سے خوش تھے اور انھوں نے کہا تھا سعودی عرب مدد کے لئے تیار ہے اور سعودی عرب لبنان کی حکومت جاری رکھنے کا عزم کئے ہوئے ہے لیکن دوسرے سفر میں معلوم نہیں کیا ہوا کہ سعد حریری نے سعودی عرب میں ہی استعفی پیش کردیا،حریری کو لبنان واپس آنے کی اجازت کیوں نہیں دی گئی؟ تا کہ وہ لبنان میں کابینہ اور لبنانی صدر کے سامنےاپنا استعفی پیش کرتے۔
سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ سعد حریری نے سعودی عرب کے شدید دباؤ میں استعفی پیش کیا ہے کیونکہ سعودی عرب کے لبنان میں کچھ اہداف ہیں جن کو سعد حریری پایہ تکمیل تک پہنچانے میں ناکام رہے جس کے بعد سعودی عرب نے اس سے استعفی پیش کرنے کے لئے دباؤ ڈالا اور انھوں نے بھی سعودی عرب میں ہی استعفی پیش کردیا اور جو کچھ سعودی عرب ان سے کہلوانا چاہتا تھا وہ سعد حریری نے کہہ دیا۔
کیا سعودی عرب کے اندرونی اور آل سعود شہزادوں کے اختلافات لبنانی وزير اعظم کے استعفی کا موجب بنے؟لبنان کے وزير اعظم کا سعودی عرب میں مستعفی ہونا لبنانی عوام اور لبنانی حکومت کی شان کے خلاف ہے سعد حریری کو غیر ملکی عناصر اور سعودی عرب کے بادشاہ اور ولیعہد نے مستعفی ہونے پر مجبور کیا ہے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 14