Thursday - 2018 Nov 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190372
Published : 6/11/2017 18:18

کیسے کی جائے رحم مادر میں بچے کی تربیت؟

پیغمبر اکرم(ص) نےایک حدیث شریف میں ولادت سے پہلے یعنی رحم مادر ہی میں بچے کی صحیح تربیت پر تاکید فرمائی ہے،چونکہ قرآن و اہل بیت(ع) کی تعلیمات کے سایہ میں جو چیز نہایت اہمیت کی حامل ہے اور جس کی بہت تاکید بھی کی گئی ہے وہ رزق حلال اور تربیت میں اس کی تاثیر ہے۔


ولایت پورٹل:پیغمبر اکرم(ص) نےایک حدیث شریف میں ولادت سے پہلے یعنی رحم مادر ہی میں بچے کی صحیح تربیت پر تاکید فرمائی ہے،چونکہ قرآن و اہل بیت(ع) کی تعلیمات کے سایہ میں جو چیز نہایت اہمیت کی حامل ہے اور جس کی بہت تاکید بھی کی گئی ہے وہ رزق حلال اور تربیت میں اس کی تاثیر ہے۔
پاک و حلال غذا کے سبب انسان کا دل نورانی ہوتا ہے،روح میں جلا پیدا ہوتی ہے الہی معارف،عبادت اور حصول علم کی طرف اس میں زیادہ رغبت پیدا ہوتی ہے پس حلال رزق وجود انسانی کے لئے اس بیج کی مانند ہے کہ جسے زرخیز زمین میں بودیا  گیاہو ،چنانچہ اگر رزق حلال ہوگا تو اس کا ثمرہ یہ ملے گا کہ انسان کا قلب نور کی طرف کھنچتا چلا جائے گاچنانچہ پیغمبر اکرم(ص) نے تربیت اولاد میں رزق حلال کی اہمیت اور ولادت سے بھی پہلے رحم مادر میں پاک غذا کی تاثیر کے متعلق ارشاد فرمایا:«أَدِّبوا أَوْلادَکمْ فی بُطُونِ اُمَّهاتِهِمْ قیلَ: وَ کیفَ ذلِک یا رَسُولَ الله؟فَقالَ بِإطْعامِهِمُ الحَلالَ»۔
اپنے بچوں کی تربیت ان کی ماؤں کے رحموں ہی میں کرو؛حضرت(ص) سے سوال کیا گیا:وہ کیسے؟
انھیں حلال غذا کھلاؤ،یعنی حاملگی کے دوران ان کی ماؤں کو حلال و پاک غذا دی جائے۔


 



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 15