Wed - 2018 Nov 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190390
Published : 8/11/2017 17:20

معصومین(ع)کی زیارات میں لعنت کا فلسلفہ

قرآن کریم اور اہلبیت(ع)کی زبانی خصوصاً معصومین(ع) کی زیارتوں میں اُن افراد،عناصر اور عوامل پر لعنت کی گئی ہے جو انسانوں کی دنیا و آخرت کی سعادت میں مانع ہوئے ہیں۔


ولایت پورٹل:لعنت یعنی رحمت و ہدایت الٰہی سے دور ہونا اور راہ سعادت سے الگ ہوجانا،چونکہ خداوند عالم یا ائمہ معصومین(ع) سے انسانوں کا رابطہ توڑنا ایک بڑا گناہ اور عالم انسانیت کے ساتھ ایک عظیم خیانت ہے تو جو لوگ بھی پوری تاریخ میں اس عظیم جرم میں شریک رہے ہیں ان سب پر خداوند عالم، انبیائے کرام اور فرشتوں نے لعنت کی ہے،اور یہ طے ہے کہ جو لوگ خدا و رسول(ص) اور ائمہ طاہرین(ع) سے الگ ہوگئے یا انھوں نے دوسروں کو ان حضرات کی ہدایت سے دور کردیا ہے تو گویا انھوں نے انہیں راہ سعادت سے محروم کردیا ہے لہٰذا وہ ملعون ہیں۔ ملعون یعنی وہ انسان جو صراط مستقیم سے بھٹک جائے اور غلط راستے پر لگ جائے۔
جو لوگ دوسروں کی گمراہی کا سبب بنے ہیں ان پر لعنت کرنا درحقیقت ایک قسم کی گواہی ہے اور کائنات میں رونما ہونے والے تلخ اور وحشتناک حقائق کا اعلان ہے، اور وہ اعلان یہ ہے کہ جن لوگوں پر لعنت کی جارہی ہے درحقیقت انھوں نے عالم انسانیت کو کمال انسانی کی منزل کمال تک پہنچنے سے روک دیا اور انہیں دنیا و آخرت کی سعادت سے محروم کردیا ہے،لہٰذا لوگوں کی گمراہی، عذاب اور بدبختی و بے چارگی میں مبتلا کرنے کا مزہ بھی انہیں کو چکھنا ہوگا،کیونکہ انھوں نے خود اپنے پیروں پر کلہاڑی ماری ہے اور اپنی دنیا و عاقبت خراب کی ہے۔
لعنت کے دوسرے معنی جو عوام میں مشہور ہیں وہ بھی پہلے معنی ہی کی طرف پلٹتے ہیں کہ لعنت کا مطلب ہے:جرم کرنے والوں کے لئے عذاب کی بددعا کرنا۔ اور اس کی وجہ بھی صاف ظاہر ہے کہ جب کوئی انسان کسی کو اپنے جائز حقوق کے راستے میں رکاوٹ بنتے ہوئے دیکھتا ہے تو خدا سے یہ دعا کرتا ہے کہ اس رکاوٹ کو دور کردے اور اسے اس سے خود بخود نفرت ہوجاتی ہے،اگر یہ رکاوٹ کسی انسان کی وجہ سے ہو کہ جس نے اپنے ارادہ و اختیارکے ساتھ دوسروں کی سعادت کا راستہ روکا ہے ،دوسروں کے لئے دنیا و آخرت میں پریشانیوں کا سبب بنا ہے تو ایسا انسان یقیناً لعنت و نفرین ،عذاب اور خدائی تنبیہ وتوبیخ کا حقدار ہے اور بلاشبہ اسے اس کے برے اور ظالمانہ اعمال کی سزا ضرور ملنا چاہئے ،اور یہ طے ہے کہ ایسے آدمی سے ہر ایک نفرت کرتاہے۔
یہی وجہ ہے کہ قرآن کریم اور اہلبیت(ع)کی زبانی خصوصاً معصومین(ع) کی زیارتوں میں اُن افراد،عناصر اور عوامل پر لعنت کی گئی ہے جو انسانوں کی دنیا و آخرت کی سعادت میں مانع ہوئے ہیں۔

 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 14