Monday - 2018 Dec 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190411
Published : 12/11/2017 15:28

سعودی عدالت نے سنائی قطیف کی شیعہ خاتون نعیمہ مطرود کو 6 برس کی سزائے قید

یاد رہے کہ نعیمہ مطرود سعودی عرب میں حقوق بشر کے لئے کام کرنے والی نہایت ہی فعال خاتون ہیں کہ جن کو مسلسل 7 مہینہ مقدمہ چلانے کے بعد 6 سال کے لئے قیدخانہ میں ڈال دیا گیا ہے۔


ولایت پورٹل:مرآۃ الجزیرۃ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سعودی کے شیعہ نشین علاقہ قطیف کی رہنے والی ایک خاتون نعیمہ مطرود کو صرف اس الزام میں کہ انھوں نے قطیف میں آل سعود کی ظالمانہ پالیسیوں کے خلاف مظاہرہ کرنے والے مجروحین کی مدد کی ہے،6 برس کی قید کی سزا سنادی گئی ہے۔
رپورٹ کے مطابق سعودی حکام نے نعیمہ مطرود پر یہ الزام بھی لگایا ہے کہ وہ سعودی حکومت کے خلاف اعتراض کرنے والے مجروحین کی شہر کے ہسپتالوں سے دور تیمارداری کرتی تھیں اور ان کے لئے دوائیاں اور معالجہ کا سامان فراہم کرتی رہیں ہیں۔
یاد رہے کہ نعیمہ مطرود سعودی عرب میں حقوق بشر کے لئے کام کرنے والی نہایت ہی فعال خاتون ہیں کہ جن کو مسلسل 7 مہینہ مقدمہ چلانے کے بعد 6 سال کے لئے قیدخانہ میں ڈال دیا گیا ہے۔
نعیمہ مطرود صوبہ قطیف کی پہلی خاتون ہیں جنھیں حقوق بشر کی حمایت کے الزام میں جیل ہوئی جبکہ ان سے پہلے بھی ایک دوسری خاتون؛اسراء الغمغام،سعودی جیل میں ہیں،اور جن پر سعودی حکومت نہایت سختی و شکنجہ کس رہی ہے۔

ریختہ


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 17