Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 191474
Published : 11/1/2018 16:38

قبر کی پہلی رات کے عذاب کو کم کرنے والے اعمال

نماز وحشت قبر یہ وہ واحد عمل ہے کہ جسے مرنے والا اپنے لئے انجام نہیں دے سکتا ورنہ گذشتہ تمام اعمال اسے اس دنیا میں اور خود ہی انجام دینا ہیں،بلکہ کسی دوست اور آشنا کی پہلی شب میں اس کے احباب کو چاہیئے کہ اس کے لئے دو رکعت نماز وحشت قبر پڑھیں تاکہ اسے قبر کے خوف و ہراس سے امان نصیب ہوجائے۔


ولایت پورٹل: قارئین کرام! موت ایک ایسی حقیقت ہے جس سے کسی کو انکار نہیں اور چونکہ یہ دنیا معصومین(ع) کی تعبیر کے مطابق، آخرت کی کھیتی ہے لہذا یہاں جو کچھ بویا جائے گا وہی آخرت میں ہمارا محصول ہوگا۔
اب جبکہ اللہ نے ہمیں نعمت حیات دے رکھی ہے اور ہمارا رابطہ اس دنیا سے نہیں کٹا ہے ہمیں ابھی سے اس گھر(قبر) کی تیاری کرنی چاہیئے چونکہ روایات کے مطابق وہ وحشت اور خوف کا گھر ہے وہاں وہی افراد سکون سے رہیں گے جن کا نامہ اعمال نیکیوں سے بھرا ہوگا لہذا روایات میں بہت سی ایسی چیزوں کے متعلق بیان ہوا ہے کہ جو قبر میں اس کے انیس و مونس ہونگے چنانچہ ہم ذیل میں ان میں سے کچھ کا تذکرہ کررہے ہیں:
1۔پیغمبر اکرم(ص) اور آپ کے اہل بیت(ع) کی دوستی:
چنانچہ رسول خدا(ص) اس سلسلہ میں ارشاد فرماتے ہیں: میرے اور میرے اہل بیت کے ساتھ  حسن رابطہ اور دوستی ۷ ایسے حساس مواقع پر کام آئے گی کہ جہاں کا خوف و ہراس بہت سنگین ہے: مرتے وقت،قبر میں،قیامت میں ،اعمال نامہ لیتے وقت،حساب کے وقت،اعمال کو تولتے وقت،صراط سے گذرتے وقت (بحارالأنوار، ج۷، ص۲۴۸) ۔
2۔میاں بیوی کے درمیان وفاداری:
حضرت امام جعفر صادق(ع) کا ارشاد گرامی ہے کہ جو شخص اپنی بد اخلاق بیوی(یا اس کے برعکس، کوئی بیوی اپنے بد اخلاق شوہر) کے مقابل صبر کرے اور اس معاملہ کو خدا کے سپرد کردے تو خداوند عالم اسے شکر گذاروں کی جزا  مرحمت فرمائے گا۔(وسائل الشیعه، ج۴، ص۱۲۲)۔
نیز پیغمبر اکرم(ص) اس سلسلہ میں ارشاد فرماتے ہیں: میری امت میں 3 طرح کی عورتوں سے قبر کا عذاب اٹھا لیا جائے گا اور وہ میری لخت جگر فاطمہ(س) کے ہمراہ محشور ہونگیں۔ 1۔وہ عورت کے جو اپنے شوہر کی بے مروتیوں کے مقابلہ حلم کا مظاہرہ کرے۔2۔ وہ عورت کے جو اپنے شوہر کی بد اخلاقی پر صبر کرے۔ 3۔ وہ عورت کہ جو اپنی تمام محبت اپنے شوہر پر نچھاور کردے۔ لہذا خداوند عالم ان میں سے ہر ایک کو  ہزار شہید اور ایک سال کی عبادت کا ثواب عطا کرے گا۔(وسائل الشیعه، ج۲۱، ص۲۸۵)۔
3۔نماز کی پابندی:
پیغمبر خدا(ص) کا ارشاد گرامی ہے: نماز ملک الموت کے سامنے نمازی کی شفاعت کرے گی،قبر کی تنہائی کے وقت اس کی بہترین مونس و ہمدم ہوگی،اور قبر میں منکر و نکیر کے سوال کا جواب بن جائے گی۔(بحارالأنوار، ج۸۲، ص۲۳۱)۔
5۔قرآن مجید کی تلاوت:
متعدد روایات کے تناظر میں درج ذیل سورہ ہای مبارکہ قبر کے عذاب کو برطرف کرنے کا سبب بنتے ہیں:
ہر جمعہ کو سورہ نساء کی تلاوت کرنا،ہمیشہ سورہ زخرف کی تلاوت کرتے رہنا،سوتے وقت سورہ تکاثر کی تلاوت کرنا،غروب سے پہلے سورہ یس و ملک کی تلاوت کرنا۔
6۔نماز وحشت قبر
چنانچہ یہ وہ واحد عمل ہے کہ جسے مرنے والا اپنے لئے انجام نہیں دے سکتا ورنہ گذشتہ تمام اعمال اسے اس دنیا میں اور خود ہی انجام دینا ہے،بلکہ کسی دوست اور آشنا کی پہلی شب میں اس کے احباب کو چاہیئے کہ اس کے لئے دو رکعت نماز وحشت قبر پڑھیں تاکہ اسے قبر کے خوف و ہراس سے امان نصیب ہوجائے۔
چنانچہ اس کے پڑھنے کا طریقہ یہ ہے:
یہ نماز دو رکعت ہے،اس کی پہلی رکعت میں سورہ حمد کے بعد 1 مرتبہ آیت الکرسی اور دوسری رکعت میں سورہ حمد کے بعد 10 مرتبہ سورہ قدر(انا انزلناہ) پڑھا جائے گا۔

 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17