Monday - 2018 June 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192024
Published : 12/2/2018 16:46

ایران کا اسلامی انقلاب امام خمینی(رح) کی نظر میں

ایران کا اسلامی انقلاب یہاں کی عوام کی جد و جہد کا نتیجہ ہے۔اسلامی انقلاب کی عظیم کامیابی کا سہرا کوئی میرے سر نہ باندھے میں تو حوزہ علمیہ کا ایک ادنیٰ سا طالب علم ہوں بلکہ یہ انقلاب اللہ کی اس قوم بلکہ مسلمانوں پر ایک عطا ہے۔
ولایت پورٹل: قارئین کرام! ہر سال  ۱۱ فروری مطابق ۲۲ بہمن کو ایران میں یوم آزادی کے طور پر منایا جاتا ہے اسی دن سن ۱۹۷۹ کو ایران میں اسلامی انقلاب کامیاب ہوا اور عوام نے اپنے محبوب قائد امام خمینی(رح) کی قیادت میں امریکہ کی کٹھپتلی اور اس کے اشاروں پر ناچنے والے ڈکٹیٹر رضا شاہ کی حکومت کا تختہ الٹ دیا تھا۔قارئین کرام ہم اس مختصر سی تحریر میں امام خمینی(رح) کی نظر میں اس دن کی اہمیت اور ایران میں اسلامی انقلاب کی کامیابی کے متعلق کچھ جملے پیش کرنے کی سعادت حاصل کررہے ہیں!
امام خمینی(رح) نے فرمایا: ہمیں مکمل آزادی اسی وقت نصیب ہوگی جب اس ملک میں ہر طرف اسلامی احکام کا نفاذ عمل میں آجائے چونکہ اسلام ہی بشریت کی سعادت کا ضامن ہے۔
آزادی و استقلال کی حفاظت خود آزادی دلانے سے زیادہ سخت ہے۔
ایران کا اسلامی انقلاب یہاں کی عوام کی جد و جہد کا نتیجہ ہے۔اسلامی انقلاب کی عظیم کامیابی کا سہرا کوئی میرے سر نہ باندھے میں تو حوزہ علمیہ کا ایک ادنیٰ سا طالب علم ہوں بلکہ یہ انقلاب اللہ کی اس قوم بلکہ مسلمانوں پر ایک عطا ہے۔
ہمیں اس انقلاب میں کامیابی اسلام کی برکت سے حاصل ہوئی ہے اور اللہ اکبر کے فلک شگاف نعروں ہی کی بدولت ہم نے پہلوی بادشاہ کو فرار کرنے پر مجبور کردیا ہے۔
جب تک انسان اللہ سے جڑا رہے گا اسے ہر محاذ پر کامیابی ملتی رہے گی۔
کامیابی یہ نہیں ہے کہ آپ کسی ملک پر قابض ہوجائیں یا آپ اپنے ملک سے کسی ظالم کو باہر نکال دیں  بلکہ حقیقی کامیابی یہ ہے کہ اللہ کی نظر رحمت آپ پر ہو جائے،آپ اسی وجہ سے کامیاب ہوئے چونکہ اللہ آپ کے ساتھ ہے اور آپ کی حفاظت کررہا ہے۔
اگر تمام دنیا ہمیں ختم کرنے کے لئے ہمارے خلاف محاذ آرائی کرلے تو بھی ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتی چونکہ اللہ ہمارے ساتھ ہے اور ہم ہی کامیاب ہونگے۔
ہم کسی سے خائف نہیں ہوتے کیونکہ ہم حق پر ہیں چاہے ہم جیتے یا ہارے ہم حق والے ہی کہلائیں گے،ہمیں ہارکا کوئی خوف نہیں۔اگرچہ ہم کبھی نہیں ہار سکتے چونکہ اللہ ہمارے ساتھ ہے۔اور اگر ہم ظاہر میں شکست بھی کھا جائیں تو  بھی اخلاقی اور معنوی فتح مسلمانوں اور اسلام کی ہی ہوگی۔
آپ لوگ حق پر ہیں اور باطل کے مقابل کھڑے ہیں چونکہ وہ ملک جس کی ہر فرد جذبہ ایثار اور شہادت سے سرشار ہو وہ ہمیشہ کامیاب ہوتا ہے۔
آپ لوگ حق پر ہیں اور باطل کے خلاف نبردآزمائی کررہے ہیں جس کے لئے بہادری اور صبر دونوں کی ضرورت ہوتی ہے اور اگر آپ کے اندر یہ دونوں عنصر نہ ہوں تو آپ کو تاریخی فتح میسر نہیں ہوسکتی،اور ہم نے خالی ہاتھوں تمام سامراجی طاقتوں پر فتح حاصل کی ہے۔
فتح،شمشیروں اور اسلحہ کے زور سے نہیں بلکہ ارادوں،حوصلوں اور خون دیکر حاصل کی جاتی ہے،اور ہم پوری دنیا کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ سامراجی طاقتوں کو بھی مٹی چٹائی جاسکتی ہے اگر ایمان مستحکم و قوی ہو۔
 جس ملک اور اس کے عوام کا پاسبان خود اللہ تعالٰی ہو اسے کوئی شکست نہیں دے سکتا اور ہماری فتح اور کامیابی کا مقصد اللہ اور اس کی رضا ہو تو پھر اسے کوئی شکست نہیں دے سکتا اسلامی اصول پر عمل پیرا ہونا ہی آپ(ایرانی قوم) کی خصوصیت ہے جس کے سبب آپ ایک ظالم فاسد حکومت کا تختہ الٹنے اور اس ملک میں سلامی نظام قائم کرنے میں کامیاب ہوئے۔
میرے بھائیوں اور دوستوں! یہ سب کچھ ایمان ہی کے سبب ممکن ہوسکا اور خدائے منان نے آپ کو اتنی بڑی کامیابی نصیب  فرمائی۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 June 18