Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192599
Published : 14/3/2018 4:45

میانمار فوج کے ہاتھوں روہنگیا مسلمانوں پر ہونے والے جرائم کے ثبوت مٹائے جارہے ہیں:ایمنسٹی انٹرنیشنل

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق میانمار کی ریاست راخائن میں فوج روہنگیا مسلمانوں خلاف کیے گئے جرائم کو چھپانے کیلیے دیہات کو مسمار کر کے نئے سرے سے تعمیر کررہی ہے اور یہاں خوفناک شکل میں فوجیوں کو تعینات کررہی ہے۔

31.jpg
ولایت پورٹل:غیر ملکی ذرائع کی رپورٹ کے مطابق ایمنسٹی انٹرنیشنل کے مطابق میانمار کی ریاست راخائن میں فوج روہنگیا مسلمانوں خلاف کیے گئے جرائم کو چھپانے کیلیے دیہات کو مسمار کر کے نئے سرے سے تعمیر کررہی ہے اور یہاں خوفناک شکل میں فوجیوں کو تعینات کررہی ہے،اطلاعات کے مطابق  ایمنسٹی انٹرنیشنل راخائن کے حوالے سے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ میانمارکی مسلح افواج نے تشددکے واقعات کی وجہ سے گھر بار چھوڑ کر جانے والے روہنگیا مسلمانوں کے رہائشی علاقے پرقبضہ کرلیا ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل کے بحرانی یونٹ کی منتظم تیرانہ حسن نے کہاہے کہ علاقے میں خوفناک شکل میں فوجی تعیناتی نے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف جرائم کے ثبوتوں کوختم کردیاہے اور اب روہنگیا مسلمانوں کے خلاف انسانی جرائم میں ملوث سکیورٹی فورسزکی طرف سے نئے بیس قائم کیے جارہے ہیں۔ تیرانہ حسن نے کہاکہ اس صورت حال نے روہنگیا مہاجرین کی رضاکارانہ، محفوظ اور باوقار واپسی کو محال کردیاہے۔
مہر





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18