Monday - 2018 Dec 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 192603
Published : 14/3/2018 5:40

امریکہ کی ایران کے خلاف ایمرجسنی میں ایک سال کی توسیع

امریکہ اور اس کے ہمدرد ایران کے اسلامی نظام سے سخت خائف ہیں جس کی وجہ سے امریکی حکام دن رات ایران کو کمزور کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔

35.jpg
ولایت پورٹل:امریکی صدر ٹرمپ  نے اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف ہنگامی حالت میں مزید ایک سال کی توسیع کرنے کا اعلان کیا ہے،امریکی صدر کا کہنا ہے کہ ایران کے خلاف 15 مارچ 1995 کو ہنگامی حالت کا نفاذ کیا گیا تھا جس کی سالانہ کی بنیاد پر تجدید کی جاتی ہے،وائٹ ہاؤس کی ویب سائٹ کے مطابق امریکی صدر نے اس ملک کی کانگریس کے نام ایک مراسلے میں اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تہران کے ساتھ واشنگٹن کے تعلقات معمول پر نہیں آئے ہیں لہذا ایران سے متعلق ہنگامی حالت کے قانون کی مدت میں مزید توسیع کردی ہے،امریکی صدر نے اسلامی جمہوریہ ایران پر دہشت گردوں کی حمایت کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی میزائل پروگرام دنیا کے لئے خطرناک ہے،ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایرانی میزائل پروگرام اور اس ملک کی پالیسی پوری دنیا خاص کر خطے کے لئے نہایت خطرناک ہے لہذا ایران کے خلاف ہنگامی حالت میں  توسیع ضروری ہے،واضح رہے کہ امریکہ ایران پر دہشت گردی کی حمایت اور دیگر مختلف قسم کے الزامات عائد کرکے ایرانی میزائل پروگرام کو مشکوک بنانا چاہتا ہے لیکن سیاسی ماہرین کے مطابق در اصل امریکہ کو ایران کا اسلامی نظام کھٹکتا ہے، امریکہ اور اس کے ہمدرد ایران کے اسلامی نظام سے سخت خائف ہیں جس کی وجہ سے امریکی حکام دن رات ایران کو کمزور کرنے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔
تسنیم





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 17