Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193394
Published : 24/4/2018 18:42

حضرت علی(ع) کی نظر میں ماہ شعبان کی عظمت

اے جوانو! کیا تمہیں یہ معلوم نہیں کہ آج ماہ شعبان المکرم کی پہلی تاریخ ہے اور خدا نے اسے شعبان اس وجہ سے کہا ہے کہ اس میں اس کی برکتیں پھیل جاتی ہیں اور بالتحقیق خدا نے اپنے بندوں پر حسنات اور نیکیوں کے دروازےکھول رکھے ہیں اور اس کے محلوں اور قصروں کو بہت ہی آسان کاموں کے ذریعہ اس مہینہ میں خریدے جاسکتے ہیں جبکہ شیطان لعین نے شرور اور برائیوں کو تمہارے سامنے اچھا بنا کر پیش کررکھا ہے تاکہ وہ تمہیں گمراہ کر سکے۔اور تمہارے رخوں کو رحمت کے دروازوں سے پھیر کر اپنی طرف منذول کررکھا ہے۔

ولایت پورٹل: حضرت امیرالمؤمنین علی علیہ السلام شعبان کی  پہلی تاریخ میں ایک جماعت کے قریب سے گذرے کہ جو مسجد میں بیٹھے قضا و قدر الہی اور اس جیسے دیگر موضوعات پر مشغول گفتگو تھے اور زور زور سے چلا رہے تھے حضرت ان کے قریب ٹہرے اور انھیں سلام کیا۔ ان سب نے سلام جواب دیا اور حضرت کے احترم میں کھڑے ہوگئے اور آپ سے بھی تشریف فرما ہونے کی گذارش کی آپ نے فرمایا: اے جوانو! تم ایسے موضوع کے متعلق باتیں کررہے ہو جو تمہیں کوئی فائدہ نہیں پہونچائے گا کیا تم لوگ یہ بات نہیں جانتے کہ خداوند عالم کے کچھ وہ بندے بھی ہیں جو خوف خدا کے سامنے سکوت اختیار کرتے ہیں جبکہ ایسا نہیں ہے کہ ان کے پاس زبان نہ ہو لیکن جب بھی وہ اپنے ذہن میں عظمت خدا کا تصور کرتے ہیں تو ان کی عقلیں مبہوت اور ان کی زبان گونگی ہوجاتی ہیں۔
شعبان کے مہینہ کی کرامت
اے جوانو! کیا تمہیں یہ معلوم نہیں کہ آج ماہ شعبان المکرم کی پہلی تاریخ ہے اور خدا نے اسے شعبان اس وجہ سے کہا ہے کہ اس میں اس کی برکتیں پھیل جاتی ہیں اور بالتحقیق خدا نے اپنے بندوں پر حسنات اور نیکیوں کے دروازےکھول رکھے ہیں اور اس کے محلوں اور قصروں کو بہت ہی آسان کاموں کے ذریعہ اس مہینہ میں خریدے جاسکتے ہیں جبکہ شیطان لعین نے شرور اور برائیوں کو تمہارے سامنے اچھا بنا کر پیش کررکھا ہے تاکہ وہ تمہیں گمراہ کر سکے۔اور تمہارے رخوں کو رحمت کے دروازوں سے پھیر کر اپنی طرف منذول کررکھا ہے۔
یہ پہلی شعبان ہے اس مہینہ میں خیرات کے دروازے ہر ایک کے واسطے کھلے ہوئے ہیں ،اور  اس مہینہ کی بہترین خیرات نماز ،روزہ،زکات، امر بالمعروف اور نہی از منکر،والدین اور اقربا کے ساتھ صلہ رحکم اور ہمسایوں کے ساتھ نرمی اور فقراء اور مساکین کو صدقہ دینا ہے۔تم اپنے کو ان امور کی سختی میں گرفتار نہ کرو جس کی تمہیں تکلیف ہی نہیں دی گئی ہے یعنی قضا اور قدر چونکہ یہ وہ چیزیں ہیں جن کی گہرائی میں جانے سے منع کیا گیا ہے چونکہ جو اللہ کے اسرار کی تفتیش کرتا ہے وہ تباہ ہوجاتا ہے۔
شعبان بندگی اور اطاعت کا مہینہ
آگاہ ہوجاؤ! اگر تمہیں یہ معلوم ہوجائے کہ خداوند عالم نے اس مہینہ میں اپنے بندوں اور اطاعت گذاروں کے لئے کیا آمادہ کررکھا ہے تو تم ہر چیز سے اپنا منھ موڑ کر اس میں لگ جاؤ گے۔
ان لوگوں نے سوال کیا: یا امیرالمؤمنین! اللہ نے اپنی اطاعت کرنے والوں کو اس مہینہ میں کیا کچھ دینے کا فیصلہ کیا ہے تو فرمایا: کیا تم نے اس جنگ کا واقعہ  نہیں سنا کہ جب لشکر اسلام پر کفار نے شبخون مارا اور صرف چند لوگ بیدار تھے اور باقی سو رہے تھے لیکن جو لوگ بیدار تھے وہ عبادت و بندگی میں مصروف تھے تو ان کے چہروں سے ایسا نور ساطع ہوا کہ پوری لشکر گاہ روشن ہوگئی جس کے سبب مسلمانوں نے بیدار ہوکر انھیں پسپا کردیا جب یہ واقعہ رسول اللہ(ص) سے نقل کیا گیا تو فرمایا: ان لوگوں سے ماہ اول شعبان کی عبادت اور اعمال کے سبب یہ نور ساطع ہوا اور پھر حضرت علی(ع) نے ان کے سامنے ان اعمال کا تذکرہ کیا جنہیں ماہ شعبان میں انجام دینا چاہیئے۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24