Monday - 2019 January 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 193904
Published : 22/5/2018 13:27

12 دن کے بعد بھی شامی میزائیلوں کو نہیں بھول پارہے ہیں اسرائیلی

10 مئی کو ہونے والے شامی حملے اسرائیل کے لئے اتنے سخت تھے کہ لاکھ چھپانے کے باوجود بھی وہ چھپا نہ سکے اور آخرکار یہ اقرار کرنے پر مجبور ہوگئے کہ اس دن کی صبح ان کے لئے قیامت سے کم نہیں تھی اور انہیں ایسا لگ رہا تھا جیسے آسمان ان پر آگ برسا رہا ہو۔
ولایت پورٹل: رپورٹ کے مطابق 10 مئی کو ہونے والے شامی حملے اسرائیل کے لئے اتنے سخت تھے کہ لاکھ چھپانے کے باوجود بھی وہ چھپا نہ سکے اور آخرکار یہ اقرار کرنے پر مجبور ہوگئے کہ اس دن کی صبح ان کے لئے قیامت سے کم نہیں تھی اور انہیں ایسا لگ رہا تھا جیسے آسمان ان پر آگ برسا رہا ہو۔
اسرائیلی فضائیہ کے کمانڈر ’’آمیکام نورکین‘‘ نے خود اسرائیلی فوج کے ترجمان کے 20 میزائیلوں والے  دعوئے کو رد کرتے ہوئے کہا کہ جولان پر داغے جانے والے میزائیلوں کی تعداد 34 تھی کہ جن میں صرف 4 ہی اپنے ہدف تک نہیں پہونچ پائے۔
یاد رہے کہ 20 مئی کو شام کی طرف سے مقبوضہ فلسطین پر داغے گئے میزائیلوں کی گونج ۱۲ دن گذرنے کے بعد بھی ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2019 January 21