Sunday - 2018 Oct. 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 195650
Published : 8/10/2018 17:0

نامحرم سے مذاق کا انجام

اس جوان نے کہا: مجھے یاد نہیں! لیکن ہاں میرے والد ہمیشہ انہیں ملامت کیا کرتے تھے چونکہ وہ نامحرموں کے ساتھ بات کرتے وقت پردے و چادر کی رعایت نہیں کرتی تھیں۔ان کے ساتھ ہنس اور بول لیتی تھیں یہی وجہ تھی کہ میرے والد ان پر اس رویہ کی وجہ سے ملامت کرتے تھے۔

ولایت پورٹل: قارئین کرام! مشہد مقدس کے ایک عالم دین نقل کرتے ہیں کہ ایک دن میں مرحوم آیت اللہ سید یونس اردبیلی(رح) کی خدمت میں حاضر تھا،ایک جوان آیا اور اس نے ایک مسئلہ دریافت کیا۔
اس نے کہا: میں نے دو دن پہلے ہی اپنی والدہ کو دفن کیا ہے اور جب میں قبر میں داخل ہوا اور ان کے سر کو زمین پر رکھنے کے لئے جھکا تو میری جیب میں ایک کارڈ بیگ تھا جس میں میرے بہت ہی کارآمد ڈاکومینٹس اور بینک کارڈ وغیرہ تھے وہ گر گئے مجھے اس وقت تو ہڑبڑاہٹ میں پتہ نہ چل سکا جب گھر آکر توجہ کی تو معلوم ہوا وہ تو قبر میں گر گئے ہیں تو کیا آپ کی اجازت ہے کہ میں نبش قبر کرکے وہ بیگ اٹھا لوں؟ اور ان سے یہ گذارش کی کہ وہ قبرستان کے عہدیداروں کے نام ایک رقعہ تحریر کردیں جس سے وہ مجھے منع نہ کریں۔آیت اللہ یونس(رح) نے فرمایا: تم صرف اسی جگہ سے قبر کھودنا جہاں تمہیں یہ احتمال ہو کہ وہاں تمہاری چیزیں گری ہونگی چنانچہ آپ نے قبرستان کے ذمہ داروں کے نام ایک خط بھی تحریر کردیا۔
یہ عالم دین بیان کرتے ہیں کہ چند دن کے بعد میں نے پھر اس جوان کو مرحوم آیت اللہ اردبیلی کے یہاں دیکھا،انہوں نے اس سے دریافت کیا کہ کیا تمہارا وہ کام ہوگیا ہے وہ بہت غمگین اداس اور مضطرب تھا اس نے کوئی جواب نہ دیا۔
چنانچہ جب انہوں نے دوبارہ سوال کیا تو اس نے کہا:جب میں نے قبر کو کھودا تو دیکھا ایک کالا باریک سانپ میری ماں کی گردن میں لپٹا ہوا ہے اور بار بار ان کے منھ کے اندر ڈنک مار رہا ہے۔یہ منظر میرے لئے اتنا وحشت ناک تھا کہ میں ڈر گیا اور میں نے اسی وقت قبر کو بند کردیا۔
میں نے اس سے سوال کیا: کیا تمہاری ماں سے کوئی غلطی سرزد ہوئی تھی؟
اس جوان نے کہا: مجھے یاد نہیں! لیکن ہاں میرے والد ہمیشہ انہیں ملامت کیا کرتے تھے چونکہ وہ نامحرموں کے ساتھ بات کرتے وقت پردے و چادر کی رعایت نہیں کرتی تھیں۔ان کے ساتھ ہنس اور بول لیتی تھیں یہی وجہ تھی کہ میرے والد ان پر اس رویہ کی وجہ سے ملامت کرتے تھے۔
سرکار ختمی مرتبت حضرت محمد مصطفٰی(ص) نے فرمایا:’’ایک وہ گروہ کہ جو جہنم میں داخل ہوگا وہ بد حجاب عورتیں ہونگی کہ جو فتنہ،اور نامحرموں کو فریب دینے کے لئے اپنے کو سجاتی و سنوارتی ہیں‘‘۔(کنزالعمال ، ج 16 ، ص 383 )




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Oct. 21