Thursday - 2018 Dec 13
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196729
Published : 1/12/2018 16:19

جناب سلمان فارسی(رض) کی نظر میں پوری دنیا پر حکومت کرنے سے بہتر چیز

جناب سلمان فارسی(رض) نے جواب دیتے ہوئے کہا:میں نے اللہ سے ایک ایسی چیز مانگی ہے کہ جس کا وزن دنیا کی بادشاہی و سلطنت سے کہیں زیادہ ہے اور وہ یہ کہ میں نے اللہ تعالٰی سے محمد و آل محمد(ص) کے وسیلہ سے یہ طلب کیا کہ وہ مجھے ایسی زبان عطا کردے جس کے ذریعہ میں ہمیشہ اس کی حمد کرتا رہوں،ایسا قلب عطا کردے جو اللہ کی نعمتوں پر اس کا شکر ادا کرنا نہ بھولے،ایسا صبر عطا کردے کہ جو دنیا کے عظیم حوادث و مصیبتوں میں صبر کرنا جانتا ہو۔اور یاد رکھو اللہ نے میری اس دعا کو مستجاب و قبول کرلیا ہے۔اور یہ دعا اس دنیا اور مافیہا پر ہزار مرتبہ حکومت کرنے سے بہتر ہے۔


ولایت پورٹل: یوں تو رسول خدا(ص) کے بہت سے صحابہ تھے جیسا کہ بعض روایت میں ملتا ہے کہ تقریباً ایک لاکھ سے زیادہ لوگوں کا شمار آپ(ص) کے اصحاب کی فہرست میں ہوتا ہے۔لیکن ان سب کے درمیان کئی نامور اور بزرگوار شخصیتیں تھیں جو ہمیشہ رسول خدا(ص) سے بے پناہ عشق کرتے تھے اور ہر لمحہ ان کی نگاہیں رسول اللہ(ص) کے لب ہای مبارک کی طرف رہتی تھیں کہ کب اللہ کا رسول ہمیں کوئی حکم دے اور کب ہم عمل کریں۔انہیں بزرگ شخصیتوں میں ایک جناب سلمان فارسی(رض) تھے۔
جناب سلمان فارسی بہت ہی عجیب و غریب شخصیت کے مالک تھے۔بقول روایات آپ ایمان کے دسویں مرتبہ پر فائز تھے۔انہوں نے ہمیشہ محمد و آل محمد سے عشق فرمایا اور ہمیشہ ان کے وفادار رہے،سلمان اس وقت بھی صدیقہ طاہرہ کے حضور حاضر ہوتے رہے جب دنیا نے نبی زادی(س) سے منھ موڑ لیا تھا آپ اہل بیت اطہار(ع) پر ویسے ہی عقیدہ رکھتے تھے جیسے اللہ کے رسول(ص) نے حکم دیا تھا چنانچہ بعض حاسدوں کی توجہات اس امر پر مبذول رہتی تھیں کہ کب سلمان ہمیں ملیں اور کب ہمیں انہیں اہل بیت(ع) کی پیروی کا طعنہ دیں۔
ایک مرتبہ کی بات ہے کہ سلمان فارسی(رض) مدینہ کے کسی کوچہ سے گذر رہے تھے،مدینہ کے کچھ لوگوں نے آپ کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا: سلمان تم تو یہ عقیدہ رکھتے ہو کہ اہل بیت نبی(ص) کے صدقہ اور وسیلہ میں جو بھی اللہ سے مانگا جائے اللہ اسے پورا کرتا ہے۔
جناب سلمان فارسی نے بڑی متانت کے ساتھ جواب دیا: بے شک،ایسا ہی ہے۔
کہا:تو تم اللہ سے اہل بیت نبی(ص) کا واسطہ دیکر اپنے لئے یہ دعا کیوں نہیں مانگ لیتے کہ تم مدینہ کے سب سے امیر آدمی بن جاؤ؟
جناب سلمان فارسی نے انہیں جواب دیتے ہوئے فرمایا:
میں نے اللہ سے ایک ایسی چیز مانگی ہے کہ جس کا وزن دنیا کی بادشاہی و سلطنت سے کہیں زیادہ ہے اور وہ یہ کہ میں نے اللہ تعالٰی سے محمد و آل محمد(ص) کے وسیلہ سے یہ طلب کیا کہ وہ مجھے ایسی زبان عطا کردے جس کے ذریعہ میں ہمیشہ اس کی حمد کرتا رہوں،ایسا قلب عطا کردے جو اللہ کی نعمتوں پر اس کا شکر ادا کرنا نہ بھولے،ایسا صبر عطا کردے کہ جو دنیا کے عظیم حوادث و مصیبتوں میں صبر کرنا جانتا ہو۔اور یاد رکھو اللہ نے میری اس دعا کو مستجاب و قبول کرلیا ہے۔اور یہ دعا اس دنیا اور مافیہا پر ہزار مرتبہ حکومت کرنے سے بہتر ہے۔

منبع:
عده الداعی و نجاح الساعی ، ص ۲۰۱


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Dec 13