Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196748
Published : 2/12/2018 8:42

بحرین میں 994 سماجی کارکن خواتین جیلوں میں قید

اس وقت ایک ہزار کے نزدیک بحرینی خواتین قید کی صعوبتیں برداشت کرنے پر مجبور ہیں جہاں انھیں طرح طرح کی جسمانی اور ذہنی ایذائیں پہنچائی جاتی ہیں یہاں تک کہ ان میں بہت ساری ایسی مائیں بھی ہیں جنہیں ان کے شیر خوار بچوں سے الگ کر دیا گیا ہے۔

ولایت پورٹل:بحرین کی الوفاق کمیٹی نے اپنے ایک بیانیہ میں خاندانی آمریت آل خلیفہ حکومت کی اس ملک کی خواتین کے خلاف غیر انسانی سلوک کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لکھا ہے کہ   آمریت نے یہاں خواتین سے ان کی آزادی ،ترقی ،تعلیم  اور سماجی ذمہ داریوں کو چھین کر انھیں سلاخوں کے پیچھے ڈھکیل دیا ہے ، بیانیہ میں مزید آیا ہے کہ  بحرینی خواتین نے سماجی سرگرمیوں اور تعلیم جیسے کئی میدانوں میں اپنا لوہا منوا لیا جو سعودی نواز آل خلیفہ  کی خاندانی آمریت  کو ایک آنکھ نہیں بہایا تو اس نے ان کے خلاف بت جا طاقت کا استعمال کرتے ہوئے ظلم و بربریت کی انتہا کر دی اور اس وقت ایک ہزار کے نزدیک بحرینی خواتین قید کی صعوبتیں برداشت کرنے پر مجبور ہیں جہاں انھیں طرح طرح کی جسمانی اور ذہنی ایذائیں پہنچائی جاتی ہیں یہاں تک کہ ان میں بہت ساری ایسی مائیں بھی ہیں جنہیں ان کے شیر خوار بچوں سے الگ کر دیا گیا ہے لیکن عالمی برادری کے کان پر جوں تک نہیں رینگ رہی ہے۔





آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10