Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196766
Published : 3/12/2018 7:57

افغانستان کے صوبہ پکتیا میں امریکہ کی وحشیانہ بمباری؛10افراد ہلاک

افغان حکام کا کہنا ہے کہ امریکی فضائی حملے میں ایک خاندان کے بچوں اور خواتین سمیت 10 افراد جاں بحق ہو گئے۔

ولایت پورٹل:افغانستان کے ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق افغان حکام نے تصدیق کی کہ صوبے پکتیا میں گزشتہ رات فضائی حملے میں متعدد معصوم شہری جاں بحق ہوئے،سابق صوبائی کونسلر ممبر شائستہ جان نے بتایا کہ مقامی افراد نے جاں بحق ہونے والوں کی لاشیں دیکھائیں اور فضائی حملے کے خلاف احتجاج کیا،صوبائی حکومت کے ترجمان عبداللہ حسرت نے دعویٰ کیا کہ فضائی حملے میں 4 جنگجو بھی ہلاک ہوئے تاہم شہریوں کی ہلاکت سے متعلق تحقیقات کا آغاز کردیا گیا،افغانستان کے دوسرے صوبے ہلمند کے جنوبی حصے میں بھی فضائی حملہ ہوا جس میں طالبان کے شیڈو گورنر اور ان کے دو ساتھیوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا گیا،این بی سی نیوز میں شائع رپورٹ کے مطابق افغانستان میں امریکی اتحادی فوجیوں کے ترجمان سارجنٹ ڈیبرا رچرڈ سن نے بتایا کہ فضائی حملے میں ایک خاندان کے افراد زخمی اور جاں بحق ہوئے جنہیں طالبان نے بطور انسانی تحفظ کے لیے استعمال کیا،واضح رہے کہ رواں برس ستمبر میں اقوام متحدہ مشن نے کہا تھا کہ دو مختلف امریکی فضائی حملوں میں 21 افغان شہریوں کو نشانہ بنایا گیا،یاد رہے کہ افغانستان کے شمال مشرقی صوبے کاپیسا میں ایک فضائی حملے کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 9 افراد جاں بحق ہوئے تھے جن میں زیادہ تر بچے اور خواتین شامل تھیں،اقوام متحدہ کی جانب سے جاری دوسرے بیان میں کہا گیا تھا کہ ابتدائی تحقیق کے مطابق افغانستان کے شمالی صوبے وردک میں 23 ستمبر کو ملٹری آپریشن کے دوران فضائی حملے میں 12 خواتین اور بچے جاں بحق ہوئے۔
تسنیم




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10