Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196788
Published : 3/12/2018 18:43

زیارت سے پہلے فرض کی ادائیگی

آیت اللہ مجتبٰی تہرانی نے جواب دیا:آپ(عج) کی زیارت تو میری بھی سب سے بڑی آرزو ہے لیکن یہ بتاؤ اگر تم لوگوں کو حضرت(عج) کا دیدار اور زیارت نصیب ہوجائے تو تم اس کے بعد تم کیا کروگے؟ہاں! آپ کی زیارت بہت اہم امر ہے لیکن اس سے بھی اہم یہ ہے کہ ہم ہر جگہ،ہر وقت،چاہے امام غائب ہوں یا حاضر، اپنی ذمہ داریوں کو بخوبی نبھائیں اگر ہم نے ایسا کیا تو پھر ہم غیبت میں بھی مقصد امام اور مشن امام(عج) کو جاری رکھ سکیں گے۔

ولایت پورٹل: زمانہ غیبت میں ہر مؤمن کی تمنا یہ ہے کہ ہمارے اور ہمارے امام حضرت ولیعصر(عج) کے مابین حائل یہ غیبت کا طولانی پردہ اٹھ جائے اور یہ دوریاں نزدیکیوں میں تبدیل ہوجائے۔حضرت کے چہرہ پر نور کی زیارت کا شرف عطا ہوجائے اور ہماری یہ تاریک آنکھیں، حضرت کے نور سے منور ہوجائیں۔لیکن صدیاں گذر گئیں اور یہ عاشقوں اور محبوں کے نالے ،یہ استغاثے، یہ دعائے ندبہ کے شاندار اور عظیم اجتماع اپنے مولا و آقا کے منتظر ہیں کہ کب حضرت ظہور فرمائیں گے اور کب اس دنیا سے بے عدالتی کا خاتمہ ہوگا ،کب مظلوموں کو ان کے پامال شدہ حقوق ملیں گے،کب ظالم کیفر کردار تک پہونچے گے۔
لیکن غیبت کبرٰی کے دور میں سچے عاشقوں، محبوں اور منتظرین کی ذمہ داری یہ ہے کہ ان کی نگاہیں اپنے مولا کے فرمان پر رہیں،اس جگہ اور اس اجتماع میں شامل ہوں جہاں ہمارے مولا کی خوشنودی ہے،اس جگہ سے دور چلے جائیں جہاں پر ٹہرنا ہمارے مولا و آقا(عج) کی نظر میں صحیح نہ ہو۔
یا دوسرے الفاظ میں یہ کہا جائے کہ ہمیں زیارت سے پہلے فرض شناسی اور اپنی ذمہ داری پر عمل کرنا سیکھنا ہوگا چنانچہ اس سلسلہ میں نامور علماء اور برجستہ خدمگذاران مکتب تشیع کا ملاحظہ فرمائیں:
تہران کے ایک بزرگ عالم دین اور معلم اخلاق مرحوم آیت اللہ مجتبٰی تہرانی(رضوان اللہ علیہ) سے آپ کے ایک شاگرد نقل کرتے ہیں کہ ہم نے ایک دن آیت اللہ تہرانی کی خدمت میں عرض کیا :استاد محترم! ہم لوگوں کی سب سے بڑی آرزو یہ ہے کہ ہمیں حضرت امام زمانہ(عج) کی زیارت نصیب ہوجائے!
آیت اللہ مجتبٰی تہرانی نے جواب دیا: یہ تو میری بھی آرزو بھی ہے لیکن یہ بتاؤ اگر تم لوگوں کو حضرت(عج) کا دیدار اور زیارت نصیب ہوجائے تو تم اس کے بعد تم کیا کروگے؟
اہم یہ ہے کہ ہم اپنی ذمہ داریوں پر عمل کریں،ہاں! آپ کی زیارت بہت اہم امر ہے لیکن اس سے بھی اہم یہ ہے کہ ہم ہر جگہ،ہر وقت،چاہے امام غائب ہوں یا حاضر، اپنی ذمہ داریوں کو بخوبی نبھائیں اگر ہم نے ایسا کیا تو پھر ہم غیبت میں بھی مقصد امام اور مشن امام(عج) پر قائم رہیں گے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10