Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 196882
Published : 8/12/2018 18:54

فوجی چھاؤنی میں بدلہ فرانس،مظاہرہ کرنے والوں پر پولس کی لاٹھی چارج

پیرس میں پچھلے ایک ہفتہ سے جاری احتجاجی مظاہرے تقریباً ایک دہائی کے سب سے بڑے پیمانے پر ہونے والے مظاہروں میں سے ہیں جن میں لوگوں کا مطالبہ یہ ہے کہ اس صدر اور اس کی کابینہ سے ملک میں کرپشن کو فروغ ملا ہے جس کے سبب مہنگائی آسمان کو چھونے لگی ہے لہذا انہیں فوراً استعفٰی دیدینا چاہیئے۔

ولایت پورٹل: موصولہ اطلاعات کے مطابق فرانس میں آج کل حکومت کے خلاف لاکھوں لوگ لگاتار ایک ہفتہ سے احتجاج کررہے ہیں جس میں پولس کی لاٹھی چارج کے سبب ایک ۸۰ برس کی بوڑھی عورت کی موت بھی ہوگئی ہے۔وہیں ۵۰۰ لوگوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق فرانس کے دارالحکومت پیرس میں ہائی الرٹ جاری کردیا گیا ہے چونکہ فرانسوی حکام کو ڈر ہے کہ اگر یہ احتجاج ختم نہ ہوئے تو ملک کے حالات بگڑسکتے ہیں لہذا حکومت نے ۸۹۰۰۰ پولس نفری تعینات کردی ہے جن سے ۸۰۰۰ پولس صرف دارالحکومت کے لئے مخصوص ہیں اور ساتھ ہی درجنوں بکتر بندگاڑیوں کو گشت کی ذمہ داری دے رکھی ہے۔
پیرس میں سبھی دکانیں،میوزیم،میٹرو اسٹیشن،اور دیگر خدماتی اداروں کو بند کررکھا ہے وہیں فٹبال میچ،اور میوزک شو بھی کینسل کردیئے گئے ہیں۔
یاد رہے کہ پیرس میں پچھلے ایک ہفتہ سے جاری احتجاجی مظاہرے تقریباً ایک دہائی کے سب سے بڑے پیمانے پر ہونے والے مظاہروں میں سے ہیں جن میں لوگوں کا مطالبہ یہ ہے کہ اس صدر اور اس کی کابینہ سے ملک میں کرپشن کو فروغ ملا ہے جس کے سبب مہنگائی آسمان کو چھونے لگی ہے لہذا انہیں فوراً استعفٰی دیدینا چاہیئے۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10