شنبه - 2019 مارس 23
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 71905
تاریخ انتشار : 25/3/2015 21:12
تعداد بازدید : 25

عراق: عیسائیوں کے گھر اور مقدس مقامات مسمار

تکفیری دہشتگرد گروہوں نے عراق کے صوبہ نینوا میں عیسائیوں کے دس گھروں کو منہدم کردیا ہے-
پریس ٹی وی کی رپورٹ کےمطابق عراق کےایک سیکورٹی ذریعےکا کہنا ہےکہ داعش کے تکفیری دہشتگردوں نے عیسائیوں کےگھروں کو لوٹنے کے بعد انہیں منہدم کردیا- داعش کی یہ مجرمانہ کارروائیاں موصل سے چوبیس کلومیٹر کے فاصلے واقع شہر قضا تلکیف میں انجام پائی ہیں۔ ادھر تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کےعناصر نے سینٹ جارج کلیساکو منہدم کردیا ہے۔ یہ کلیسا دسویں صدی ہجری میں بنایا گیا تھا۔ کلدانی عیسایئ‏وں نے اس کلیسا کو جو دراصل آشوری عیسائیوں نے بنایا تھا اٹھارہ سو چھیالیس میں دینی تعلیم کے مرکز میں تبدیل کردیا تھا- واضح رہے کہ رواں مہینے کے آغاز میں تکفیری دہشتگرد گروہ داعش نے تاریخی کلیسا ماربہنام کےکچھ حصے منہدم کردیئے تھے- یہ کلیسا موصل کے مشرق میں بتیس کلومیٹر کے فاصلے پر واقع شہر قرقوش کےنزدیک ہے- یادرہے کہ داعش کے تکفیری عناصر نے انیس فروری کو موصل کے شمال میں مریم مقدس نامی کلیسا کو بم دھماکے سے اڑادیاتھا- امریکہ اور سعودی عرب کے حمایت یافتہ تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کی جانب سے عراق میں آشوری عیسائیوں کےخلاف جاری حملوں میں تیزی آگئی ہے- آشوری عیسائیوں کا شمار دنیا کے قدیم عیسائی فرقوں میں ہوتا ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :