شنبه - 2019 مارس 23
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 71924
تاریخ انتشار : 26/3/2015 20:5
تعداد بازدید : 22

افغانستان: صوبہ دایکندی میں شدید جھڑپیں

افغانستان کے صوبے دایکندی میں طالبان اور افغان سیکورٹی فورس کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئی ہیں۔
افغانستان کے صوبے دایکندی کے علاقے کجران کے ایک اعلی عہدیدار کا کہنا ہے کہ کجران کے علاقے میں طالبان گروہ اور سیکورٹی فورس کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ گذشتہ دس روز سے جاری ہے جس میں اب شدّت آگئی ہے۔ اس عہدیدار کے مطابق طالبان گروہ کی جانب سے بھاری ہتھیاروں کا استعال کیا جارہا ہے اور اگر امدادی فوج روانہ نہیں کی گئی تو کجران کا علاقہ سقوط کرسکتا ہے۔ دریں اثنا دایکندی کی صوبائی کونسل کے رکن ابراہیم رحمانی نے اعلان کیا ہے کہ ان جھڑپوں کے بعد طالبان گروہ نے کجران سے بیس شیعہ مسلمانوں کو اغوا کرلیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ طالبان گروہ نے اغوا کئے جانے والے ان شیعہ مسلمانوں کو صوبے ارزگان میں واقع علاقے چارچینوی منتقل کردیا ہے۔ تقریبا ایک ماہ قبل بھی کابل قندھار ہائی وے سے نامعلوم افراد نے تیس ہزارہ مسلمانوں کو اغوا کرلیا تھا جن کی ابتک کوئی خبر نہیں ملی ہے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :