دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 71977
تاریخ انتشار : 29/3/2015 22:7
تعداد بازدید : 25

بحرین: آل خلیفہ کی حکومت ناجائز، چودہ فروری اتحاد

بحرین کے انقلابیوں کے چودہ فروری اتحاد نے اعلان کیا ہے کہ شیخ حمد بن عیسی آل خلیفہ کی حکومت غیرقانونی ہے۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق بحرین کے چودہ فروری اتحاد نے مصر کے شہر شرم الشیخ میں عرب لیگ کے سربراہی اجلاس میں شیح حمد بن عیسی آل خلیفہ کی شرکت پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا ہے کہ بحرین کے عوام نے نومبر دو ہزار چودہ میں ملک میں موجودہ خاندانی آمریت کی جگہ اقوام متحدہ کی نگرانی میں نئے سیاسی نظام کے قیام کے حق میں ووٹ دیا اور اس کے مطابق وہ اپنے نمائندے کی حیثیت سے شرم الشیخ اجلاس میں شیخ حمد بن عیسی آل خلیفہ کی شرکت کو جائز نہیں سمجھتے ہیں۔ بحرین کے انقلابی گروہوں کے اتحاد نے اس بیان میں حمد بن عیسی کو ایک مجرم ڈکٹیٹر قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ وہ صرف اپنے خاندان اور بعض غیرملکی ایجنٹوں کے نمائندے ہیں کہ جنھیں وہ اپنے گرتے ہوئے تاج و تخت کو بچانے کے لیے باہر سے بحرین میں لائے ہیں۔ بحرین کے چودہ فروری اتحاد کے بیان میں عرب ممالک کے سربراہوں کو امریکی احکامات پر عمل کرنے والی کٹھ پتلیاں قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ عرب سربراہ صیہونی حکومت کا مقابلہ کرنے اور اس حکومت کے چنگل سے مقبوضہ فلسطینی علاقوں کو آزاد کرانے کے لیے مشترکہ عرب فوج تشکیل دینے کے بجائے اپنی قوموں کے جائز اور قانونی مطالبات اور پرامن احتجاج کو کچلنے میں لگے ہوئے ہیں اور اس کا ثبوت سپر جزیرہ نامی فوج کے ہاتھوں بحرینی عوام کی سرکوبی ہے۔ اس بیان میں عرب لیگ کے سربراہی اجلاس کے نتائج کو بے وقعت قراردیتے ہوئے اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ کوئی بھی ایسا حریت پسند عرب نہیں ملے گا کہ جو اس قسم کے نمائشی اور سیاسی دیوالیہ پن کے شکار اجلاسوں کو ذرہ برابر بھی اہمیت دیتا ہو۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :