Monday - 2019 January 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 72008
Published : 30/3/2015 17:38

سعودی جارحیت: 3000 پاکستانیوں کا سکون چھن گیا

یمن پر سعودی عرب کی جارحیت کے نتیجے میں تین ہزار سے زائد پاکستانیوں کو اپنے روزگار اور پرسکون زندگی سے محروم ہونا پڑا ہے۔
ہمارے نمائندے کے مطابق یمن سے واپس آنے والے پاکستانیوں کا کہنا ہے کہ سعودی حملوں کی وجہ سے ہزاروں پاکستانی شہریوں کو یمن سے بے دخل ہونا پڑے گا۔ شہریوں کا کہنا تھا کہ وہ موت کے منہ سے نکل کر آئے ہیں کیونکہ سعودی طیاروں نے اچانک رات کے وقت بمباری شروع کردی تھی۔ قابل ذکر ہے کہ یمن سے پانچ سو کے قریب پاکستانیوں کاایک قافلہ اتوار کی رات پاکستان واپس پہنچ گیا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق سعودی عرب کی جارحیت کی وجہ سے ڈھائی ہزار سے زائد پاکستان شہری اب بھی یمن کے مختلف شہروں میں پھنسے ہوئے ہیں۔جبکہ ایک سو دس کے قریب پاکستانی قیدی بھی مختلف جیلوں میں بند ہیں۔ کہا جارہا ہے کہ  سیکڑوں پاکستانی شہری عدن میں پھنسے ہوئے جہاں سعودی عرب کے حمایت یافتہ مفرور صدر منصور ہادی کے حامی باغیوں اور یمنی فوج کے درمیان زبردست لڑائی ہورہی ہے۔ پاکستانی حکام کا کہنا ہے کہ عدن میں پھنسے ہوئے پاکستانیوں تک ان کی رسائي ممکن نہیں ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2019 January 21