دوشنبه - 2019 مارس 18
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 73218
تاریخ انتشار : 19/4/2015 21:39
تعداد بازدید : 17

سعودی عرب کاری ضربوں کا منتظر رہے

اسلامی جمہوریہ ایران کی بری فوج کے سربراہ نے کہا ہےکہ ایران نے سعودی عرب کو نصحیت کی ہے کہ یمن میں برادر کشی سے دستبردار ہو جائے-
بری فوج کے سربراہ جنرل احمد رضا پوردستان نے کہا ہے کہ ایران سعودی عرب سے تصادم کا خواہاں نہیں ہے اور چاہتا ہے سعودی عرب یمن میں برادر کشی سے ہاتھ کھینچ لے- انہوں کہا کہ اگر سعودی عرب ایک لمبی اور تھکا دینے والی جنگ میں پھنس گیا تو اسے نہایت ہی شدید نقصان پہنچ سکتا ہے- جنرل احمد رضا پوردستان نے العالم سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں سعودی عرب سے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ جنگ سے ہاتھ کھینچ لے کیونکہ یمن کی قوم ایک عظیم قوم ہے- انہوں نے کہا کہ جیسا کہ رہبر انقلاب اسلامی اور سپریم کمانڈر نے فرمایا ہے کہ صیہونی حکومت کو چھوٹی سی سرزمین غزہ میں شکست ہوئی تو یمن تو ایک تاریخی ملک ہے- انہوں نے کہا کہ دلچسپ بات یہ ہے کہ سعودی عرب یمن کے خلاف لڑائی کے تجربوں کا حامل ہے اور یمنی قوم نے گذشتہ برسوں کے دوران متعدد مرتبہ سعودی جارحیت کے بعد سعودی عرب کی بہت سی فوجی چوکیوں پر قبضہ کر لیا تھا- جنرل احمد رضا پوردستان نے کہا کہ یمن کی تاریخ سے معلوم ہوتا ہےکہ یمنی عوام ایک جنگجو اور بہادر قوم اور استقامت و پائیداری کے حامل ہیں- انہوں نے کہا کہ ایک اور بات یہ ہے کہ سعودی فوج کے پاس جنگ کا کوئی تجربہ نہیں ہے اور اگر وہ تھکا دینے والی جنگ میں پھنس گیا تو اسے بے پناہ نقصان ہو گا اور شرمناک شکست سے دوچار ہو جائے گا- سعودی عرب کے لئے بہتر ہے کہ وہ جنگ سے دستبردار ہو کر مذاکرات کا عمل اختیار کر لے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :