Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 73317
Published : 20/4/2015 19:4

دہشت گردوں کو سعودی ہتھیاروں کی فراہمی

یمن کے ایک فوجی جنرل نے سعودی عرب سے اقوام متحدہ کے امدادی ٹرکوں کے ذریعے بڑی مقدار میں یمن پہنچائے جانے والے ہتھیار ضبط کئے جانے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی بادشاہ نے دہشتگردوں اور منصور ہادی کے جنگجوؤں کو فنڈ فراہم کرنے کا وعدہ ملت یمن کے قتل عام کے لئے کیا ہے- یمنی فوج کے بریگیڈیئر احمد صبیح الکامل نے صنعا میں فارس نیوز ایجنسی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ یمنی فوج نے عوامی انقلابی تحریک انصاراللہ کے تعاون سے جنوبی یمن کے صوبہ عدن میں بم اور میزائل بنانے کی ایک بڑی فیکٹری کا پتہ لگا کر اسے ضبط کر لیا ہے- تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ اسلحے کی اس فیکٹری کے معاملے میں سعودی شہری ملوث ہیں اور منصور ہادی کے جنگجوؤں اور دہشتگردوں کے ساتھ ان کے تعلقات ہیں کہ جو یمن میں دہشت گردانہ کارروائیوں میں مصروف ہیں- انھوں نے مزید کہا کہ فوج اور عوامی انقلابی تحریک انصار اللہ نے بھاری مقدار میں بم بنانے کے ساز و سامان اور فوجی وردیاں ضبط کی ہیں جو اقوام متحدہ کے انسانی ہمدردی پر مبنی امدادی سامان پہنچانے والے ٹرکوں کے ذریعے یمن پہنچی تھیں- جنرل صبیح الکامل نے کہا کہ سعودی عرب نے داعش دہشتگردوں کو شام سے یمن پہنچایا ہے تاکہ وہ منصور ہادی اور انقلابی کمیٹیوں کے درمیان ہونے والی لڑائی میں حصہ لیں- سعودی عرب یمن کے مختلف علاقوں میں بڑے پیمانے پر شکست کے بعد دہشتگردوں اور اپنے ایجنٹوں سے مدد لینے پر مجبور ہوا ہے- انھوں نے مزید کہا کہ سعودی بادشاہ کی یمن کے لئے دو سو چوہتر ملین ڈالر کی مالی مدد کا وعدہ بھی دہشتگردوں اور منصور ہادی کے جنگجؤوں کی مدد کے لئے ہے اور یہ دہشتگردانہ امداد ملت یمن کے قتل عام کے لئے ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22