Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 73905
Published : 29/4/2015 22:26

فوجی آپریشن میں دو سو طالبان کے مارے گئے

افغانستان کی وزارت داخلہ نے اس ملک کے شمال میں فوج کی کاروائی میں دسیوں طالبان کے ہلاک ہونے کی خبر دی ہے- افغانستان کی وزارت داخلہ کے ترجمان صدیق صدیقی نے کابل میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ قندوز، بدخشاں اور فاریاب سمیت افغانستان کے شمالی صوبوں میں گذشتہ چار روز سے جاری فوجی کاروائی میں دوسو طالبان مارے گئے ہیں- مرنے والوں میں غیر ملکی طالبان بھی ہیں- انھوں نے کہا کہ صوبہ قندوز میں منگل کے دن ہونے والے فوجی آپریشن میں چونتیس طالبان ہلاک ہوگئے- افغانستان کی وزارت داخلہ کے ترجمان نے مسلح مخالفین کے مقابلے میں صدر اشرف غنی کی جانب سے اعلان جہاد کی جانب اشارہ کرتے ہوئے، افغان عوام سے مطالبہ کیا کہ فوج کے ساتھ تعاون کریں- صدیق صدیقی نے شمالی افغانستان کے صوبوں میں مسلح مخالفین کے نفوذ اور بدامنی میں اضافے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان سے غیر ملکی فوجیوں کا انخلاء، سیکورٹی کی ذمہ داری افغان فوجیوں کے حوالے کرنا اور وزیرستان میں پاکستان کی فوجی کاروائیوں کے باعث مسلح مخالفین نے افغانستان کے شمالی صوبوں میں اثر و نفوذ بڑھانے کے لئے اقدامات شروع کردئیے ہیں- انھوں نے کہا کہ افغانستان کو پاکستان کی سرزمین سے طالبان، القاعدہ، حقانی نیٹ ورک، لشکرطیبہ اور لشکرجھنگوی جیسے دہشتگرد گروہوں کی طرف سے خطرات لاحق ہیں- صدیق صدیقی نے افغانستان کے شمالی صوبوں میں گذشتہ چند روز سے جاری کاروائیوں میں بارہ فوجیوں کے مارے جانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ تازہ دم مسلح مخالفین، پاکستان سے شمالی افغانستان کے صوبہ قندوز میں داخل ہوئے ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18