دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 73948
تاریخ انتشار : 2/5/2015 5:10
تعداد بازدید : 24

عراق میں امریکی مداخلت کا منصوبہ

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکرڈاکٹر لاریجانی نے امریکی کانگریس کی جانب سے عراقی گروہوں کو مسلح کیا جانا اور ان کے لئے مالی فنڈ مختص کرنا، عراق کے اقتدار اعلی کی خلاف ورزی ہے-
موصولہ رپورٹ کے مطابق ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے جمعرات کے روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ عرا ق کے مختلف گروہوں کو مسلح کرنے کے امریکی کانگریس کے اقدام کا مقصد دہشتگردی کے خلاف جنگ میں حکومت اور عراقی عوام کی کامیابی میں خلل ڈالنا ہے- ڈاکٹر لاریجانی نے کہا کہ کانگریس کے اس اقدام سے امریکہ عزائم کھل کر سامنے آگئے ہیں- ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا کہ حیرت کی بات یہ ہے کہ امریکہ، عراق میں، مختلف گروہوں کو بغداد حکومت کی مرضی اور اجازت کے بغیر براہ راست مسلح کئے جانے کو عراق کے اقتدار اعلی کے منافی اور اس ملک کی سلامتی کے لئے خطرہ نہیں سمجھتا- ڈاکٹر علی لاریجانی نے کہا کہ اگر امریکی حکام دہشتگردی کے خلاف جد و جہد پر یقین رکھتے ہیں تو انہیں عراقی حکومت کو مضبوط بنانے میں بغداد کے ساتھ تعاون کرنا چاہیۓ- قابل ذکر ہے کہ عراق کے بعض قبائل اور پیشمرگہ فورسز کو مسلح کرنے کے لئے امریکی کانگریس میں ایک مجوزہ بل پر غور ہو رہا ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :