Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 75110
Published : 24/5/2015 6:38

قطیف: مسجد پر دہشتگردانہ حملہ، دنیا بھر میں مذمت

سعودی عرب کے صوبہ قطیف میں نمازیوں پر ہونے والے دہشتگردانہ حملے کی دنیا بھر میں مذمت کی جا رہی ہے- اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان مرضیہ افخم نےسعودی عرب کےشہر قطیف کی مسجد امام علی (ع) میں نمازیوں پر دہشتگردانہ حملے کی شدید مذمت کی ہے۔ اس حملے میں بڑی تعداد میں نمازی شہید اور زخمی ہوئے ہیں۔ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان مرضیہ افخم نے اپنے ایک بیان میں اس دہشتگردانہ واقعے کے ذمہ داروں کی شناخت اور انھیں قرار واقعی سزا دیئے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔ مرضیہ افخم کا کہنا تھا کہ دہشتگردی اور انتہاپسند گروہوں کا مقابلہ، بیرونی مہم جوئی کا سد باب اور علاقے کی قوموں پر مسلط کئے جانے والے ناقابل تلافی نقصانات کو روکنا ضروری ہے اور اسے ترجیحات میں شامل ہونا چاہئے۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے بھی قطیف کی مسجد امام علی میں نمازیوں پر ہونے والے حملے کی مذمت کی ہے۔ بان کی مون نے ایک بیان جاری کرکے اس حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے مقدس مقامات پر حملے کو نفرت انگیز قرار دیا اور اس طرح کے اقدامات کو مذہبی اختلافات کو ھوا دینے کی کوشش سے تعبیر کیا۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے بھی جمعے کو مشرقی سعودی عرب کے قطیف علاقے میں شیعہ مسلمانوں کی مسجد پر حملے کی سخت مذمت کی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ اس حملے کی ذمہ داری داعش دہشتگرد گروہ نے قبول کی ہے۔ لبنان کے وزیر اعظم "تمام سلام" نے بھی قطیف کی مسجد امام علی میں دہشتگردانہ حملے کو بزدلانہ اقدام قرار دیا ہے۔ حزب اللہ نے بھی ایک بیان جاری کر کے سعودی عرب کے قطیف علاقے کی مسجد امام علی میں دہشتگردانہ اقدام کی مذمت کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ تکفیری اور دہشتگرد گروہوں کا مقصد مسلمانوں کے درمیان قبائلی اور مذہبی تفرقہ ڈالنا ہے۔ حکومت پاکستان نے بھی سعودی عرب کے شہر القطیف کی مسجد امام علی میں ہونے والے خودکش حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ اسلامی کانفرنس تنیظیم کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں بھی قطیف میں نمازیوں کو شہید کرنے کے واقعے کی مذمت کی گئی ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12